ناجائز تعلقات کی رقابت پر خاتون قتل، جانوروں نے نعش چیر پھاڑ ڈالی

ناجائز تعلقات کی رقابت پر خاتون قتل، جانوروں نے نعش چیر پھاڑ ڈالی
ناجائز تعلقات کی رقابت پر خاتون قتل، جانوروں نے نعش چیر پھاڑ ڈالی

  

پاکپتن (ویب ڈیسک)ناجائز تعلقات کے شبہ پر ملزم نے شادی شدہ خاتون کو دریا کے کنارے لے جا کر چھریاں مار کر قتل کر دیا، خاتون کی نعش کو جنگلی جانوروں نے چیر پھاڑ ڈالا۔ڈی پی او پاکپتن کامران یوسف ملک نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے ملزم کو جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے کراچی سے گرفتار کر کے عدالت میں پیش کر دیا۔نواحی گائوں 47 ای بی کے رہائشی سعید احمد کی بھابی چار بچوں کی ماں ممتاز بی بی تین اپریل کو گھر سے اچانک غائب ہو گئی۔جس کا ڈی پی او پاکپتن کامران یوسف ملک نے نوٹس لیتے ہوئے ایس ایچ او تھانہ قبولہ رانا عمران ٹیپو کی سربراہی میں پولیس ٹیم تشکیل دے دی۔پولیس نے جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے خاتون کے موبائل فون سے ڈیٹا ٹریس کر کے ضلع بہاولپور کی تحصیل خیر پور ٹامے والی کے گاو¿ں عنایتیاں کے رہائشی ملزم محمد سجاد کو گرفتار کر لیا۔جس نے دوران تفتیش انکشاف کیا کہ مقتولہ خاتون ممتاز بی بی کے ساتھ اس کا گزشتہ تقریباً تین چار سال قبل سے تعلقات تھے۔ملزم نے بتایا کہ مقتولہ ایک دفعہ گھر سے بیوٹیشن کا کورس کرنے کے لیے ایک ماہ کے لیے لاہور بھی اس کے پاس رہ کر گئی تھی۔ملزم نے بتایا کہ وہ وقوعے کے روز اپنے گاو¿ں سے خاتون کو ملنے آیا ہوا تھا اور اس کے ساتھ گپ شپ کرنے کے لیے اسے دریائے ستلج کی بیلٹ میں لے گیا۔'جہاں پر خاتون کے ایک اور آشنا پشاور کے رہائشی کا فون آ گیا جس پر اس نے طیش میں آ کر خاتون کے پیٹ میں چھریاں مار کر وہیں تڑپتا ہوا چھوڑ کر فرار ہو گیا۔'ایس ایچ او تھانہ قبولہ رانا عمران ٹیپو نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ اس مقدمے کے تفتیشی اے ایس آئی محمد تنویر کے ہمراہ ہم نے جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے ملزم کو کراچی سے گرفتار کیا گیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ ملزم کی نشاندہی پر دریائے ستلج میں سے خاتون کے اعضا برآمد کر لیے گئے ہیں اور اگر ملزم چند روز اور گرفتار نہ ہوتا تو خاتون کی باقیات کو بھی جنگلی جانور کھا جاتے۔انہوں نے بتایا کہ خاتون کے اعضا کو پوسٹ مارٹم کے بعد ڈی این اے ٹیسٹ کے لیے لیب بھجوایا جائے گا۔پولیس نے ملزم کو عدالت میں پیش کر دیا جس پر عدالت نے ریمانڈ پر ملزم کو پولیس کے حوالے کر دیا ہے۔

مزید : پاکپتن