نواز حکومت کےمستقبل کافیصلہ پاکستانی عوام نے کرنا ہے:امریکا

نواز حکومت کےمستقبل کافیصلہ پاکستانی عوام نے کرنا ہے:امریکا
نواز حکومت کےمستقبل کافیصلہ پاکستانی عوام نے کرنا ہے:امریکا

  

واشنگٹن(ویب ڈیسک) امریکا نے کہا ہے پاناما لیکس حکومتوں کا ذاتی معاملہ ہے ، وزیراعظم نوازشریف کے مستقبل کا فیصلہ پاکستانی عوام نے کرنا ہے۔ ایک جمہوری حکومت کے منتخب وزیراعظم کے متعلق فیصلہ اس کے عوام ہی کریں تو بہتر ہو گا۔یہ بات ترجمان امریکی محکمہ خارجہ جان کربی نے واشنگٹن میں ہفتہ وارپریس بریفنگ سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ جب ان سے سوال کیا گیا کہ پاناما لیکس کے معاملے پر کیا آپ وزیراعظم نواز شریف کی کرپشن کی حمایت کرتے ہیں اور کیا انہیں حکومت میں رہنا چاہئے تو انہوں نے کہا کہ نواز شریف کے استعفے کا فیصلہ پاکستان کا اندرونی معاملہ ہے۔ ہم نے ہمیشہ کرپشن اور اس کے نقصانات پر واضح موقف اختیار کیا کہ کرپشن سے دہشتگردی کو فروغ ملتا ہے اورانتہا پسندی اور اقتصا دی عدم استحکام میں اضا فہ ہو تا ہے ، انہوں نے مزید کہا امریکا انتہاپسندی اور کرپشن کو انتہائی سنجیدگی سے دیکھتا ہے۔ترجمان کا کہنا تھا پاکستان اور امریکا دہشت گردوں کو برداشت نہیں کرسکتے ، پاکستان کی دہشت گردوں کے خلاف کارروائیوں پر امریکا کو اطمینان ہے ،پاکستان دہشت گردوں کے گروپس کے خلاف بلاتفریق کارروائی کررہا ہے۔انہوں نے کہا افغان مفاہمتی عمل کے لیے پاکستان کی مثبت کوششوں کی تعریف کرتے ہیں، امریکا افغان امن عمل میں پیشرفت چاہتا ہے تاہم اگر طالبان نے مسلح جدوجہد کا راستہ نہ چھوڑا تو ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ ایک سوال کے جواب میں ترجمان جان کربی کا کہنا تھاپاکستانی حکومت کو حقانی ، القاعدہ اور لشکر طیبہ سمیت تمام جنگجو گروپوں کے خلاف کارروائی کر نے کاکہتے رہے ہیںاورپاکستانی حکومت خود یہ بات متعدد بار کہہ چکی ہے کہ وہ تمام شدت پسند گروہوں کے خلاف بلا تفریق کارروائی کر رہی ہے۔

مزید : بین الاقوامی