سعودی عرب نے پاکستانی سی فوڈ کی درآمد پر پابندی لگادی

سعودی عرب نے پاکستانی سی فوڈ کی درآمد پر پابندی لگادی
سعودی عرب نے پاکستانی سی فوڈ کی درآمد پر پابندی لگادی

  

کراچی (ویب ڈیسک) پاکستان کی سی فوڈ برآمدات کو نیا جھٹکا لگا ہے۔ سعودی عرب نے مضر صحت کیمیکل کی موجودگی کی وجہ سے پاکستانی سی فوڈ پر پابندی عائد کر دی ہے ۔ پاکستان فشریز ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن کے مطابق پاکستان کے فارمنگ جھینگوں میں سفید دھبوں کی بیماری کا انکشاف ہو اہے جس کے باعث سعودی عرب نے پاکستان سے جھینگے کی درآمد پر پابندی لگادی ہے جس کا اطلاق یکم اپریل سے ہو چکا ہے۔ سعودی عرب کی جانب سے لگائی گئی پابندی کی وجہ سے خلیجی ممالک سمیت دنیا کے دوسرے ممالک میں بھی سی فوڈ کی برآمدات خطرے میں پڑ گئی ہیں۔ پابندی کی وجہ سے 500 ملین ڈالر کی برآمدات متاثر ہونے کا خدشہ ہے ۔ پاکستان فشریز ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ چیک اینڈ بیلنس اور کوالٹی کنٹرول کے بعد مال برآمد کیا جاتا ہے ۔ فشریز ڈویلپمنٹ بورڈ کی ذمہ داری تھی کہ وہ مرین فشریز ڈیپارٹمنٹ کو آگاہ کرتا کہ برآمد کئے جانے والے جھینگوں میں مضر صحت کیمیکل موجو دہے۔ اس تمام صورت حال کی وجہ سے سی فوڈ کے برآمد کنندگان مشکل میں پھنس گئے ہیں۔ دوسری جانب میرین فشریز ڈیپارٹمنٹ کا کہنا ہے کہ تمام جھینگوں میں بیماری نہیں۔ پابندی بلا جواز ہے۔ حکام کے مطابق سعودی عرب کو سمندری پانی کا جھینگا برآمد کیا جاتا ہے جس میں کوئی بیماری نہیں اگر غلطی سے کلچرڈ جھینگے کی کنسائمنٹ ہو گئی ہے تو سعودی حکام آگاہ اور معاملے کی چھان بین کی جائے گی۔ اس سلسلے میں وزارت خارجہ کو بھی خط لکھا گیاہے کہ پابندی کے خاتمے کیلئے سعودی حکام سے بات کی جائے۔ پاکستان سعودی عرب کو سالانہ 71 لاکھ ڈالر کی دو ہزار میٹرک ٹن سمندری خوراک برآمد کرتا ہے جس میں 189 ٹن جھینگا شامل ہے۔

مزید : کراچی