کفرکے فتوے لگاکر قتل و غارت گری جائز نہیں : حافظ سعید

کفرکے فتوے لگاکر قتل و غارت گری جائز نہیں : حافظ سعید
کفرکے فتوے لگاکر قتل و غارت گری جائز نہیں : حافظ سعید

  

لاہور(ویب ڈیسک) امیر جماعۃ الدعوة پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ افغانستان میں شکست کا بدلہ لینے کیلئے داعش جیسی تنظیمیں کھڑی کی گئیں۔ پاکستان سمیت پورے عالم اسلام میں فتنہ و فساد برپا کرنے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔ اسلام امن و سلامتی کا دین ہے ‘ اس کا دہشت گردی سے کوئی تعلق نہیں۔ مسلمان ملکوں میں تخریب کاری و دہشت گردی بیرونی قوتیں کروا رہی ہیں۔ کلمہ طیبہ کی بنیاد پر حاصل کئے گئے پاکستان کا استحکام بھی اسلامی شریعت کے نفاذ میں ہے۔ کفر کے فتوے لگا کر قتل و غارت گری جائز نہیں ۔ امت مسلمہ کو کلمہ طیبہ پر متحد کیا جائے۔ وہ کھرڑیوالہ فیصل آباد کے مقامی شادی ہال میں نظریہ پاکستان کانفرنس سے خطاب اور بعد ازاں مرکز خیبر میں مختلف وفود سے گفتگو کررہے تھے۔ اس موقع پر جماعۃ الدعوة فیصل آباد کے مسول فیاض احمد، حافظ بنیامن عابد، قاری محمد اسحاق ، حافظ سلمان و دیگر نے بھی خطاب کیا۔ حافظ محمد سعید نے کہا کشمیری اپنی عزتوں و حقوق کے تحفظ کیلئے غاصب بھارت کیخلاف برسر پیکار ہیں۔ اسلام پر دہشت گردی کے الزامات لگانے والے اس کی اصل روح سے واقف نہیں ہیں۔ جماعۃ الدعوة ملک کے کونے کونے میں جاکر لوگوں کو بیرونی قوتوں کی سازشوں سے آگاہ کر رہی ہے تھرپار کر سندھ، بلوچستان و دیگر علاقہ میں انسانیت کی خدمت کرنا فلاح انسانیت فاﺅنڈیشن کی اولین کوشش رہی ہے۔ جماعۃ الدعوة اور فلاح انسانیت فاﺅنڈیشن اسلامی اصولوں کے مطابق خدمت انسانیت پر یقین رکھتی ہے۔

مزید : لاہور