پیپلز پارٹی نے سرمد جلال عثمانی کی سربراہی میں جوڈیشل کمیشن مسترد کردیا ،رضار بانی کو تحقیقاتی کمیشن کا سربراہ بنا یا جائے :خورشید شاہ

پیپلز پارٹی نے سرمد جلال عثمانی کی سربراہی میں جوڈیشل کمیشن مسترد کردیا ...
پیپلز پارٹی نے سرمد جلال عثمانی کی سربراہی میں جوڈیشل کمیشن مسترد کردیا ،رضار بانی کو تحقیقاتی کمیشن کا سربراہ بنا یا جائے :خورشید شاہ

  

اسلام آباد (مانیٹر نگ ڈیسک )پیپلز پارٹی نے پاناما لیکس کے معاملے پر جسٹس ریٹائرڈ سرمد جلال عثمانی کی سربراہی میں جوڈیشل کمیشن کی مخالفت کردی ۔قومی اسمبلی کے قائد حزب اختلاف خورشید شاہ نے مطالبہ کیا ہے کہ پاناما لیکس کے معاملے پر جوڈیشل کمیشن کے بجائے پارلیمانی کمیشن ہونا چاہیے جس کے سربراہ چیئر مین سینٹ رضا ربانی کو بنا یا جائے ۔

میڈ یا رپورٹس کے مطابق خورشید شاہ نے کہا جسٹس ریٹائرڈ جلال عثمانی قابل احترام شخصیت ہیں لیکن وہ جوڈیشل کمیشن کے سربراہ کی حیثیت سے قبول نہیں ہیں ۔انہوں نے کہا کہ 2007میں نواز شریف سرمد جلال عثمانی کے گھر گئے ،سرمد جلال عثمانی کی اہلیہ نے ن لیگ میں شمولیت اختیار کی اور سرمد جلال عثمانی کی اہلیہ نے کہا کہ ریٹائرمنٹ کے بعد شوہر بھی ن لیگ میں شامل ہو جائیں گے ۔

خورشید شاہ نے پاناما لیکس کے معاملے پر تحقیقاتی کمیشن کے لیے رضا ربانی کا نام تجویز کرتے ہوئے کہا پاناما لیکس کے معاملے پر جوڈیشل کمیشن کے بجائے پارلیمانی کمیشن تشکیل دیا جانا چاہیے جس میں آدھے اپوزیشن اور آدھے حکومتی اراکین ہوں ۔انہوں نے کہاکہ چیئر مین سینٹ رضا ربانی وہ شخصیت ہیںجن پر سب کو اعتماد ہو سکتا ہے،رضا ربانی کو تمام اختیارات دئیے جائیں اور ٹیکنیکل افراد کی خدمات بھی دی جائیں ۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -