انٹرنیٹ استعمال کرتے ہوئے طالب علم کو اپنی استانی کی ایسی تصویر نظر آگئی کہ پیروں تلے سے زمین نکل گئی، سکول میں ہنگامہ ہوگیا

انٹرنیٹ استعمال کرتے ہوئے طالب علم کو اپنی استانی کی ایسی تصویر نظر آگئی کہ ...
انٹرنیٹ استعمال کرتے ہوئے طالب علم کو اپنی استانی کی ایسی تصویر نظر آگئی کہ پیروں تلے سے زمین نکل گئی، سکول میں ہنگامہ ہوگیا

  

صوفیہ (نیوز ڈیسک) رومانیہ میں ایک سکول کی ٹیچر نے فارغ وقت میں ایسا کام شروع کردیا کہ جس کا انکشاف ہوتے ہی ہر کسی کے رونگٹے کھڑے ہو گئے۔

اخبار ڈیلی سٹار کے مطابق لاسی کاﺅنٹی کے پریسا کانی سکول میں جغرافیے کی ٹیچر جارجیانا اپنی دلکش صورت اور ملنسار مزاج کی وجہ سے بہت پسند کی جاتی تھیں، لیکن کسی کو اندازہ بھی نہیں تھا کہ ان کی بظاہر معصوم اور دلکش شخصیت کے پیچھے کتنا بھیانک راز چھپا تھا۔ سکول انتظامیہ کو پتہ چلا تھا کہ سکو ل کے طلباءکے درمیان کچھ فحش تصاویر اور ویڈیوز گردش کر رہی ہیں اور یہ افواہ بھی گرم تھی کہ یہ تصاویر اور ویڈیوز سکول کی ہی ایک ٹیچر کی تھیں۔

یہ معاملہ سامنے آنے کے بعد پرنسپل ماریا کترینہ نے تحقیقات کا آغاز کیا تو پتہ چلا کہ فحش تصاویر اور ویڈیوز جغرافیے کی 27سالہ ٹیچر جارجیانا کی تھیں۔ ناقابل یقین صورتحال اس وقت واضح ہو گئی جب آٹھویں جماعت کے ایک بچے نے بتایا کہ اسے یہ ویڈیوز انٹرنیٹ کی ایک فحش ویب سائٹ سے ملی تھیں۔

’ٹیچنگ‘ کا شعبہ اختیار کرنے والی خواتین میں مردوں کے حوالے سے یہ ایک بات مشترک ہوتی ہے، سائنسدانوں کا ایسا انوکھا انکشاف کہ تمام طالبعلموں کو سوچ میں ڈال دیا

انتظامیہ کی تحقیقات سے پتہ چلا کہ ٹیچر جارجیانا سکول ٹیچنگ کے ساتھ ایک فحش اداکارہ کے طور پر بھی کام کررہی تھیں اور ان کی درجنوں حیا سوز ویڈیوز انٹرنیٹ پر موجود تھیں۔ سکول پرنسپل ماریانا کترینہ کا کہنا تھا کہ جارجیانا نے ابتدائی طور پر تصاویر اور ویڈیوز کو جعلی قرار دیا، لیکن پھر اچانک سکول آنا بند کردیا۔

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ وہ کئی سالوں سے لاسی شہر میں مقیم تھیں اور محض دو سال قبل ہی اپنے آبائی علاقے پریسا کانی واپس آئی تھیں۔ یہ معاملہ سامنے آنے کے بعد سکول میں ٹیچرز بچوں سے نظریں ملانے سے شرمارہے ہیں تو دوسری جانب والدین سخت پریشان ہیں کہ ان کے بچوں کو کس قسم کی عورت تعلیم دے رہی تھی۔

مقامی محکمہ تعلیم کے افسران کا کہنا تھا کہ اگرچہ ٹیچر نے ازخود ملازمت چھوڑدی ہے لیکن ان کے خلاف تحقیقات مکمل کی جائیں گی، جس کے بعد انہیں ٹیچنگ کے لئے عمر بھر کے لئے نااہل قرار دیا جاسکتا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -