کسی ریٹائرڈ جج کا نام فائنل نہیں ہوا،وزیر اعظم علاج کے لئے باہر گئے ، افواہیں نہ پھیلائی جائیں :خواجہ سعد رفیق

کسی ریٹائرڈ جج کا نام فائنل نہیں ہوا،وزیر اعظم علاج کے لئے باہر گئے ، ...
 کسی ریٹائرڈ جج کا نام فائنل نہیں ہوا،وزیر اعظم علاج کے لئے باہر گئے ، افواہیں نہ پھیلائی جائیں :خواجہ سعد رفیق

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک )وفاقی وزیرریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ پاناما لیکس کمیشن کے حوالے سے ابھی تک کسی ریٹائرڈ جج کا نام فائنل نہیں ہوا ، وزیر اعظم بیمار ہیں اور وہ علاج کی غرض سے بیرون ملک گئے ہیں جب صحتیاب ہونگے تو وطن واپس آ جائینگے اس لئے افواہیں نہپھیلائی جائیں،عمران خان خود پانامہ لیکس کا سراغ لگانے میں سنجیدہ نہیں کیونکہ انہیں علم ہے کہ اگر اس پر شفاف کمیشن کا قیام عمل میں آ گیا تو انہیں اپنی سیاست چمکانے کا موقع نہیں ملے گا۔

نجی ٹی وی کے مطابق ڈیفنس ہاؤسنگ اتھارٹی (ڈی ایچ اے)لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ سعد رفیق کا کہنا تھا کہ عمران خان برطانیہ  میں فرانزک آڈٹ کی کمپنیوں سے ملنے نہیں بلکہ اپنے یہودی برادر نسبتی کی انتخابی مہم میں حصہ لینے گئے ۔انہوں نے کہا کہ حسن اور حسین نواز نے پاکستان سے باہر کوئی پیسہ نہیں بھیجا،جبکہ عمران خان خود تسلیم کر چکے ہیں کہ انہوں نے شوکت خانم کے نام پر جمع ہونے والے پیسوں سے باہر سرمایہ کاری کی اور انہیں پانچ سال بعد واپس لایا گیا ، عمران خان اس پر علماء کرام سے فتویٰ لیں کیا خیرات اور زکوۃ کے پیسے سے ا س طرح سرمایہ کاری کی جا سکتی ہے؟انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف 24اپریل کو اسلام آباد میں ناچ گانا اور بھنگڑا شو کرنے جارہی ہے ،ہم پر پی ٹی آئی کا کوئی پریشر نہیں، حکومت چاہتی ہے کہ دھرنے کی بجائے اسمبلی میں بیٹھ کر مسئلے کا حل نکالا جائے لیکن عمران خان شفاف تحقیقات چاہتے ہی نہیں ،کیونکہ وہ اس مسئلے کے ذریعے سیاست کرنے کے چکر میں ہیں ،انہیں معلوم ہے کہ اگر اس پر شفاف کمیشن بن گیا تو پھر انہیں سیاست چمکانے کا موقع نہیں ملے گا۔خواجہ سعد رفیق کا کہنا تھا کہ مجھے تو لندن پلان کا علم نہیں لیکن اگر دھرنے والوں کے ذہن میں ایسی کوئی بات ہو تو کچھ کہا نہیں جا سکتا، پانامہ لیکس پر احتجاج کرنے والے اس کا سراغ لگانے میں سنجیدہ نہیں کیونکہ سب کو معلوم ہے کہ اگر وہ سنجیدہ ہوئے تو ان میں سے بہت سے لوگوں کو خود احتساب کے لئے پیش ہونا پڑے گا ۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -