میٹرو سٹیشن پر لگی ایل ای ڈی میں ایسی شرمناک ویڈیو چل گئی کہ خواتین منہ چھپانے لگیں، مرد حضرات کے بھی کان لال ہو گئے، ایسا کیا چل گیا؟ جان کر آپ کو بھی اپنی آنکھوں پر یقین نہیں آ ئے گا

میٹرو سٹیشن پر لگی ایل ای ڈی میں ایسی شرمناک ویڈیو چل گئی کہ خواتین منہ ...
میٹرو سٹیشن پر لگی ایل ای ڈی میں ایسی شرمناک ویڈیو چل گئی کہ خواتین منہ چھپانے لگیں، مرد حضرات کے بھی کان لال ہو گئے، ایسا کیا چل گیا؟ جان کر آپ کو بھی اپنی آنکھوں پر یقین نہیں آ ئے گا

  

نئی دہلی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی دارالحکومت کے وسط میں واقع مصروف ترین میٹرو سٹیشن ”راجیو چوک میٹرو سٹیشن“ پر آئے خواتین و حضرات اس وقت شرم سے پانی پانی ہو گئے جب وہاں نصب ایک ایل ای ڈی پر فحش فلم چلا دی گئی اور یہ سلسلہ 10 منٹ تک جاری رہا۔

ویرات کوہلی نے شاہد آفریدی کیلئے ایسا تحفہ بھیج دیا کہ پاکستانیوں کی خوشی کی انتہاءنہ رہے گی، بھارتیوں کے منہ کھلے کے کھلے رہ گئے

بھارتی خبر رساں ادارے کے مطابق یہ سکرین 9 اپریل کو میٹرو سٹیشن پر نصب کی گئی تھی جس پر اشتہارات چلائے جانے تھے، لیکن اچانک اس پر فحش فلم چلنا شروع ہو گئی اور وہاں موجود افراد ہکا بکا رہ گئے۔ عینی شاہدین کے مطابق یہ سلسلہ اس وقت بند ہوا جب میٹرو سٹیشن پر موجود دہلی میٹرو ریل کارپوریشن (ڈی ایم آر سی) کے حکام کو اس سے آگاہ کیا گیا۔

سٹیشن پر موجود متعدد مسافروں نے اس واقعے کی ویڈیو اپنے موبائل فون میں محفوظ کر لی اور بعد ازاں سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کر دیں جس کے باعث دہلی میٹرو ریل کارپوریشن کو تحقیقات کا آغاز کرنا پڑا۔ حکام کا کہنا ہے کہ 3 نامعلوم افراد اس حرکت میں ملوث ہو سکتے ہیں کیونکہ سسٹم محفوظ نہیں ہے۔

ڈی ایم آر سی کے ترجمان انوج دیال کا کہنا ہے کہ ابتدائی تحقیقات کے بعد پتہ چلا ہے کہ یہ واقعہ 9 اپریل کو شام 5 بجے پیش آیا۔ انہوں نے کہا کہ ”ایل ای ڈی ٹی وی کی تنصیب کے معاملہ تاحال مکمل نہیں ہوئے تھے اور ایک پرائیویٹ کنٹریکٹر کی ٹیسٹ کر رہا تھا اور کام اب بھی ختم نہیں ہوا ہے۔“

انہوں نے کہا کہ ”بادی النظر میں سی سی ٹی وی فوٹیج کے مطابق 3 افراد نے اپنے موبائل فونز کے ذریعے اس پر فحش ویڈیو چلائی کیونکہ ایل ایل ڈی ٹی وی کی وائی فائی پورٹ قابل رسائی تھی، ان افراد کی تلاش جاری ہے، اور اس مقصد کیلئے سی سی ٹی وی فوٹیج کا معائنہ کیا جا رہا ہے۔“

ٹروکالر کی نئی ایپلیکیشن متعارف، گوگل ڈو کیساتھ انضمام کا بھی اعلان

ترجمان نے بتایا کہ ایک ” ایک بار سافٹ وئیر مکمل ہو جائے تو پھر یہ سینٹرلی طور پر کنٹرول ہو گا جس کے باعث مستقبل میں ٹی وی سسٹم کیساتھ اس طرح کی چھیڑ خانی ممکن نہیں رہے گی تاہم تب تک نگران کنٹریکٹر کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ وائی فائی پورٹس پر پاس ورڈ ضرور لگائیں۔“

دوسری جانب دہلی پولیس کا کہنا ہے کہ ڈی ایم آر سی کی طرف سے تاحال اس معاملے پر کوئی شکایت درج نہیں کرائی گئی۔ ایک سینئر پولیس افسر کے مطابق ”اگر ڈی ایم آر سی حکام نے محکمانہ تحقیقات کے بعد اس سلسلے میں رابطہ کیا تو ہم بھی قانونی کارروائی کریں گے۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -