تھپڑوں والی کبڈی نے جان لے لی 

تھپڑوں والی کبڈی نے جان لے لی 

یہ خبر بے حد افسوس ناک ہے کہ خطرناک کھیل ’’تھپڑوں والی کبڈی‘‘ نے چھٹی جماعت کے طالب علم کی جان لے لی۔ یہ واقعہ میاں چنوں میں کبڈی میچ کے دوران پیش آیا۔ سکول کی ٹیم میں شامل بلال مدمقابل ٹیم کے تھپڑوں کی ضربات برداشت نہ کر سکا اور بے ہوش ہو گیا، اُسے فوری طور پر ہسپتال نہ پہنچایا گیا۔ ریسکیو ٹیم جب پہنچی تو طالب علم بلال بے ہوشی کی حالت میں جاں بحق ہو چکا تھا۔ زوردار تھپڑوں والی کبڈی خطرناک کھیل ہے، اس میں جسمانی طور پر مضبوط کھلاڑیوں کو شامل کیا جاتا ہے۔ سکول کے طالب علموں کی ٹیم میں بلال کی جسمانی حالت کمزور تھی، اس کے باوجود کبڈی میچ کے لئے منتخب کر لیا گیا۔ اس معاملے میں اساتذہ اور کھیلوں کے انچارج کی طرف سے غیر ذمے دارانہ فیصلہ کیا گیا۔ بلال کی جگہ زیادہ صحت مند اور مضبوط جسم کے مالک طالب علم کو شامل کرنا چاہئے تھا۔ اوّل تو سکولوں میں کھلاڑیوں کے سینے پر تھپڑوں والی کبڈی کو شامل نہیں کیا جانا چاہئے۔ اس پر پابندی ہونی چاہئے تاکہ آئندہ کوئی ایسا افسوس ناک واقعہ پیش نہ آئے۔ کھیلوں کو فروغ دیتے ہوئے ایسے تمام پہلوؤں کا خیال رکھنے کی اشد ضرورت ہے۔ 

مزید : رائے /اداریہ