چین نے شام پر امریکی فوجی حملے کے خلاف مذمتی قرارداد کی حمایت کردی

چین نے شام پر امریکی فوجی حملے کے خلاف مذمتی قرارداد کی حمایت کردی

نیویارک (آئی این پی ) چین نے شام پر امریکہ کے فوجی حملے کے خلاف مذمتی قرارداد کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ چین عالمی تعلقات میں فوجی طاقت کے استعمال کی مخالفت کرتا ہے، مختلف ممالک کے اقتدار اعلی، خود مختاری ،وحدت اور علاقائی سالمیت کا احترام کیا جانا چاہئے،سلامتی کونسل کی منظوری کے بغیر یک طرفہ فوجی کارروائی سے شام کے مسئلے کے حل میں نئی مشکلات کا اضافہ ہو گا۔ چائنہ ریڈیو انٹرنیشنل کے مطابق سلامتی کونسل نے امریکہ، برطانیہ اور فرانس کے شام پر فوجی حملے کے بعد ہنگامی کھلا اجلاس منعقد کیا۔ اقوام متحدہ میں تعینات چین کے مستقل مندوب ما چاو شوئی نے مذکورہ اجلاس سے خطاب میں متعلقہ فریقوں سے عالمی قانون کے دائرے میں واپس آنے اور بات چیت اور مشاورت کے ذریعے مسئلے کو حل کرنے کی اپیل کی۔ اسی روز سلامتی کونسل میں روس کی جانب سے امریکہ ،فرانس اور برطانیہ کے شام پر کئے گئے فوجی حملے کی مذمت کیلئے پیش کردہ ایک قرارداد کے مسودے پر رائے شمار ی کی گئی۔سلامتی کونسل کے پندرہ اراکین میں سے تین نے قرارداد کی حمایت ، آٹھ نے مخالفت جبکہ چار ارکان نے رائے شماری میں حصہ نہیں لیا۔رائے شماری کے بعد چین کے مندوب ما چاو شوئی نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا دنیا جانتی ہے کہ چین عالمی تعلقات میں فوجی طاقت کے استعمال کی مخالفت کرتا ہے۔چین کا موقف ہے کہ مختلف ممالک کے اقتدار اعلی، خود مختاری ،وحدت اور علاقائی سالمیت کا احترام کیا جانا چاہئے۔سلامتی کونسل کی منظوری کے بغیر کوئی بھی یک طرفہ فوجی کارروائی اقوام متحدہ کے چارٹر ، اصولوں ، عالمی قانون اور عالمی تعلقات کے بنیادی ضوابط کی خلاف ورزی ہے،اس سے شام کے مسئلے کے حل میں نئی مشکلات کا اضافہ ہو گا۔اسی اصول اور موقف کی بنیاد پر چین نے روس کی جانب سے پیش کردہ قرارداد کے مسودے کے حق میں ووٹ دیا۔

مزید : کراچی صفحہ اول