فاروق ستار لپر پی ایس پی کے دروازے ہمیشہ کیلئے بند کر دیے ہیں:مصطفیٰ کمال

فاروق ستار لپر پی ایس پی کے دروازے ہمیشہ کیلئے بند کر دیے ہیں:مصطفیٰ کمال

کراچی(اسٹاف رپورٹر )پاک سر زمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال نے کہا ہے کہ ڈاکٹر فاروق ستار پر پی ایس پی کے دروازے ہمیشہ ہمیشہ کے لئے بند ہوگئے ہیں۔ اتنا جھوٹا اور شاطر شخص زندگی میں نہیں دیکھا اور اب رسوائی اس شخص کا مقدر ہے۔فاروق ستار نے دوست کے گھر میں اکیلے بلا کر ملاقات کی اور کہا کہ ایک مرتبہ پتنگ اور ایم کیو ایم کے نام پر مہاجروں کوگمراہ کروں گا۔مصطفی کمال نے دعوی کیا کہ ڈاکٹر فاروق ستار نے انیس قائمخانی کو کامران ٹیسوری کے گھر ملاقات کے لئے بلا کر پوچھا کہ میرے لیے کیا پیکج ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اتوار کو پی ایس پی کے مرکز پاکستان ہاس میں متحدہ قومی موومنٹ سے تعلق رکھنے والی خاتون رکن سندھ اسمبلی سمیتا افضال کی پی ایس پی میں شمولیت کے موقع پر پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر انیس قائم خانی اور دیگر بھی موجود تھے۔سید مصطفی کمال نے کہاکہ فیصلے کی گھڑیاں آگئی ہیں آج چند اہم اعلان کرنے جارہے ہے میں اپنے دروازے بند نہیں کرونگا اللہ کے سامنے معافی مانگے کر غرور اور شر سے بچنے کہ لئے یہ اعلان فاروق ستار کے لیے کہ پی ایس پی کے دروازے ان پرہمیشہ ہمیشہ کے لیے بند ہیں فاروق ستار نے ثابت کردیا کہ یہ ہر لحاظ سے چھوٹا آدمی ہے انتہائی شاطر اور جھوٹا آدمی ہے رسوائی اس آدمی کا مقدر ہے،صبح چھ بجے فاروق ستار نے ایک پریس کانفرنس کی ایک ڈوبتے ہوئے شخص نے تنکے کا سہارا لینے کی کوشش کی اورالزام لگایا گیا کہ ہم نے دباو ڈال کر لوگوں کو اپنے ساتھ ملانے کی کوشش کی جب یہ لوگ آپس میں لڑ رہے تھے ہم نے اس پر ایک لفظ نہیں بولا چاہتے تو ان کے پرخچے اڑا سکتے تھے کیا پی ایس پی نے ان کے درمیان جھگڑا کروایا،فاروق ستار، مئیر کراچی وسیم اختر اور عامر خان پر کرپشن کے الزام لگاتے ہیں کیا ہم نے کہا انہیں،خالد مقبول صدیقی نے کہا پارٹی میں ماہ جبینوں کی ضرورت نہیںیعنی اب تک پارٹی میں خواتین کو گندی نظر سے دیکھتے تھے کیا یہ ہم نے خالد مقبول سے کرایا،فاروق ستار نے انیس قائم خانی کو فون کر کے کہتے ہیں کہ میرا جلسہ کامیاب کرنے کے لیے کارکن بھیجیں فاروق ستار فون پر کہتے رہے کہ کچھ لوگ بھیج دیں جلسہ کامیاب کرنے کے لئے ہمیں بہادرآباد کو نیچا دکھاناہے،سینٹ الیکشن والے دن فاروق ستار انیس قائم خانی کو فون پر منتیں کرتے رہے کہ ہمیں دو ووٹ دے دو کامران ٹیسوری کو24 تاریخ کو فاروق ستار نے کہا کہ انیس قائم خانی سے اکیلے میں ملنا ہے مصطفی کمال کے بغیر آئیں ڈسٹرکٹ ایسٹ میں فاروق ستار کے دوست کے گھر میں ملاقات ہوئی فاروق ستار نے انیس قائمخانی سے کہا کہ کل الیکشن کمیشن سے فیصلہ آنے والا ہے میرے لئے کیا پیکیج ہے آپ کے پاس اور جس دن فیصلہ آیا اس دن بھی فون کر کے شکریہ ادا کیا اور تین بجے پریس کانفرنس میں ہمارے خلاف بات کر رہے تھے انہوں نے کہاکہ فاروق ستار نے مجھ سے کہا میں پتنگ کے نشان پر مہاجروں سے بلف لروں گا، فاروق ستار کہتے تھے الطاف کے مرنے کا انتظار کرو میں کچھ نہیں کر سکتا،فاروق ستار نے 22 اگست کو ایک رات میں قائد سے غداری کر دی فاروق ستار کو کیا نہیں پتہ کہ الطاف حسین پہلی مرتبہ نعرہ لگا رہا ہے ہم نے 3 ماہ کے دوران فاروق ستار کو کچھ نہیں کہہ رہے تھے نواز شریف کہتے ہی اگر ہمیں موقع ملا تو کراچی کو لاہور جیسا بنا دیں گے کیا مودی کی حکومت ہے ملک پر کیوں ترقی نہیں کی فاروق ستار تم نے مہاجروں کا ٹھیکہ اٹھا رکھا ہے ، کیا تم نہیں چاہتے کہ مہاجروں کو حقوق ملیں انہوں نے کہاکہ یہ اخبار میں آپ کو دکھا رہا ہوں اس کے مین پیج پر خبر لگی ہے کہ ان کی گورنر ہاس میں شہباز شریف سے ملاقات ہوئی ہے یہ نواز شریف صاحب کا جو موقف ہے مجھے کیوں نکالا اس کا تسلسل ہے شہباز شریف صاحب کہ رہے ہیں کہ اگر ہمیں موقع ملا ہم کراچی کی قسمت بدل دینگے تو ابھی کس کی حکومت ہے دیکھنا اب یہ شہدا قبرستان کی طرف جائیں گیینگ اور امی کو بھی تیار رکھیں گے تم شہدا کے ناموں کو اپنی بدکاریوں چھپانے کے لئے استعمال کرتے ہو ہمارے آنے کی بعد مہاجر بچے آنا شروع ہوگئے تھے اور تم نے یہ سلسلہ بھی رکوادیا تم تین نسلیں کھا چکے ہوں یہ جتنے لوگ آئے ہیں سب نے مجھ سے پوچھا آپ بتائیں ہم کیا کہیں لیکن میں نے منع کیا کہ جہاں سے آئے ہو اس سے دشمنی مت رکھو تعلقات رکھنا کہتے ہیں انیس قائم خانی نے فون کیا یہ جو لوگ آرہے ہیں انھوں نے ہفتے ہفتے ان سے ڈیبیٹ کی جب جا کر قائل ہوئے یہ جس سے یہ پریس کانفرنس میں کہلوارہے تھے کہ بولو بولو یہ پرسوں ہم سے چار گھنٹے مل کر گیا اور کیا گفتگو کرکے گئے سور کیا کیا بول کر گئے کہ کیا جارہا ہے انہوں نے کہاکہ کچھ لوگوں کے ڈی این اے وہ بہت اچھی طرح جانتا تھا یہ جو کہتے ہیں مہاجروں کے نام پر ہم سیاست کرتے ہی آج ہمارے ساتھ ی افسر تنولی نواز خان نیازی ہمارے ساتھ اپنی برادریوں کے ساتھ بیٹھے ہیں تو میں کیا اپنے ان بھائیوں کو بولوں کہ چلے جاں میں مہاجر ہوں میں ان کو مہاجروں کے خلاف کھڑا کردوں میں لوگو کو مرواوں اور اپنی سیاست چمکانے اور مہاجر اپنے ایک علاقے سے دوسرے علاقے کا نہ پاں مہاجروں ہم تمہارے راستوں سے کانٹے چن رہے ہم تمہارے نئے دوست بنا رہے ہیں انہوں نے کہاکہ میں اللہ کو حاضر ناظر جان کر سب کو گلے لگا کر ایک کرنے کی بات کرہا ہوں کیا اس میں میرا زیادتی فائدہ ہے یہ کل شہباز شریف کے ساتھ مہاجروں کے حقوق کی بات کر رہا تھا یا اپنے زیادتی مفاد کی بات کر رہا تھا میرے پاس ایسی داستانیں ہیں ان کی یہ ٹیسوری کا ایشو ہم نے پیدا کیا ہے یہ جو ویڈیوز ہیں ٹیسوری کے پاس یہ ہم نے دی ہیں ہم نے اللہ کی رضا کے لئے یہ کام شروع کیا تھا آج فاروق ستار کی سیاست ختم ہوگئی ہے میں اپنے دونوں بھائیوں کو اپنی برادری کے ساتھ شامل ہونے پر مبارکباد دیتا ہوں میں سمیرا کو بھی مبارکباد د دیتا ہوں میں ایم کیو ایم کے سوشل میڈیا کے انچارج ہے ہم کو جوائن کررہے ہیں آصف قائم خانی اے پی ایم ایل سے آئے ہیں ان کو بھی خوش آمدید کہتا ہوں میرے ساتھ ناہید باجی ہیں ان کے بھا جہانگیر شہید ہیں شیراز وحید کے بھا شہید ہیں کیا یہ لوگ شہدا کا سودا کرکے آئے ہیں ہمارے پاس سینکڑوں شہدا کے گھر والے آتی ہیں اور کہتے ہیں ہمیں افسوس ہوتا ہے رکن سندھ اسمبلیمیتا افضال نے کہاکہ سب سے بڑی اور پہلی بات نہ مجھ پر پریشر تھا میں اپنے گھر سے آ میں نے خود اپنی خواہش کا اظہار کیا کہ مجھے پارٹی جوئن کرنی ہے ہمارے یہ اپنے پرسنل ڈیسیژن ہی کی میں پاکستان کے لئے کام کرنا چاہتی اس شہر کے لیے کام کرنا چاہتی ہوں 22 اگست کیبعد ہم دیکھتے رہے کہ فاروق بھا معاملات ٹھیک کرینگے میں ان کو کہ چکی ہوں کہ فاروق بھا آپ بائی پولر ہوچکے ہیں الیکشن الیکشن کی آپ بات کرتے ہیں اور آپ لوگ اصل میں کرتے ہی سلیکشن ہیں اس مو قع پر نواز خان نیازی میں نے آج پی ایس پی کو جوائن کیا میری مسلم لیگ ن کو چھوڑ کر ان کی پارٹی جوائن کی تاکہ میں لوگوں کی خدمت کرونگا اور علی افسر تنولی میں مصطفی کمال کی باتوں سے اتفاق کرتا ہوں خاص طور پر جو کہ سب قوموں کو ساتھ لے کر چلنے کی بات کرتے ہیں اور آج جو کراچی میں امن ہے اس میں مصطفی کمال کا کردار انتہائی اہم ہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...