پی ٹی آئی حکومت نے عوام میں ایک نیا جنون پیدا کیا:فضل

پی ٹی آئی حکومت نے عوام میں ایک نیا جنون پیدا کیا:فضل

سوات (بیورو رپورٹ)پاکستان تحریک انصاف ضلع سوات کے صدر وچیئرمین ڈیڈک سوات فضل حکیم خان نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے حکومت نے عوام میں ایک نیا جنون پیدا کیا ہے اورہمیشہ عوام کی ووٹ کو احترام کے نظر سے دیکھا ہے جو مخالفین سے ازما یہ نہیں جاتا۔ضلع سوات کے عوام نے ایک دفعہ پھر الیکشن سے پہلے پہلے اپنا فیصلہ شروع کردیا ہے۔اسلئے بڑے بڑوں سیاسی قائدین کے نیندیں حرام ہوکر سوات یاد آگیا ہے ۔لیکن سوات میں اُن کیلئے کوئی جگہ نہیں ،اپنے حکومتوں میں سوات کو یتیم چھوڑ کر وہ کس منہ سے ووٹ مانگے گی۔ اگردوسرے سیاسی جماعتیں سب ایک ہو جائے مگر پھر بھی انشاء اللہ پاکستان تحریک انصاف کی جنون کا مقابلہ نہیں کرسکتے۔ آئندہ عام انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف پوری ملک میں کلین سویپ کریں گے اور پاکستان کا وزیر اعظم عمران خان ہوگا ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز یونین کونسل فیض آباد کے علاقہ کارگل میں ایک عظیم الشان شمولیتی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔یونین کونسل فیض آباد کے علاقہ کارگل کا پورا گاوں 250سے زائد خاندانوں نے پاکستان تحریک انصاف میں شامل ہوکر عمران خان اور فضل حکیم خان پر مکمل اعتما د کا ااظہار کردیا ۔ فضل حکیم خان کا مزید کہنا تھا کہ مخالفین پاکستان تحریک انصاف کے روز بروز مقبولیت سے بوکھلاہٹ کا شکار ہوئے ہیں کیونکہ پچھلے دور کے حکومتوں میں حکومت جب ختم ہونے کے قریب تھے تو ان کے لوگ اپنے پارٹیوں کو چھوڑتے تھے مگر اب صرف پاکستان تحریک انصاف کے حکومت ہے کہ اخری وقت میں بھی لوگ جوق درجوق عمران خان کے قافلے میں شامل ہورہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا حکومت نے پوری صوبے کیساتھ ساتھ ضلع سوات میں بھی ریکارڈ ترقیاتی کام کئے ہیں اور محکموں کو کرپشن سے پاک کردئے ہیں ۔شمولیتی جلسے کے دوران علاقے کے عوام نے پاکستان تحریک انصاف زندہ باد ، عمران خان زندہ باد اور فضل حکیم زندہ باد کے نعرے لگائے جس سے فضا مزید گرم ہوگیا۔شمولیتی جلسے سے احمد شاہ،آصف اقبال ،حنیف الرحمن ،محبوب علی ،ظفر خان اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔شمولیتی جلسے کے آخر میں پاکستان تحریک انصاف ضلع سوات کے صدر وچیئرمین ڈیڈک سوات فضل حکیم خان اور دیگر پارٹی قائدین نے سینکڑوں نئی شامل ہونے والے افراد کو پارٹی کے ٹوپیاں پہنادی اور ان کو مبارکباد بھی دی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر