تحریک انصاف کی حکومت میں تحفظ حقوق نسواں بل پیش کیا مگر ان کو منہ کے کھانی پڑی

تحریک انصاف کی حکومت میں تحفظ حقوق نسواں بل پیش کیا مگر ان کو منہ کے کھانی پڑی

رستم (نمائندہ پاکستان )جمعیت علماء اسلام کے صوبائی نائب امیر سنیٹر مولانا عطاء الرحمان نے کہا کہ جے یو آئی نے ملک میں ہر قسم کی غیر اسلام اور غیر شرعی قانون سازی کا راستہ روکا ہے 73 کے آئین کو جمعیت کے محصوص ممبران کی بدولت ایک جامع اسلامی ائین بنایا گیا 342کے ا یوان میں 9ممبر ز ہونے کے باوجود آئین میں دین اور اسلام کے حوالے سے ایک لفظ بھی تبدیل نہیں ہونے دیا ان خیالات کا اظہار انہوں نے پلوڈھیری چراگاہ میں ایک بڑے شمولیتی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر،تحصیل جنرل سیکرٹری قاری نیاز علی ،مولانا مبارک احمد ،مفتی حماد اللہ ،مولانا محمد عاطف سمیت صوبائی اور ضلعی امراء اور عہدیداران بھی موجود تھے ،انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت میں تحفظ حقوق نسواں بل پیش کیا مگر ان کو منہ کے کھانی پڑی ،پنجاب اور سندھ میں غیر شرعی بل منظور کرائے گئے تھے اور جمعیت علماء اسلام کے موثر کوششوں کے بدولت وہ نامفذ نہ ہو سکے انہوں نے کہا کہ آج کادور بندوق کا نہیں بلکہ ووٹ کا جنگ ہے اور جے یو آئی ووٹ کے ذریعے ملک میں تبدیلی آئے گی ،اس موقع پر شام پر پر حملوں اور سانحہ قندوز کے خلاف مذمتی قرارداد منظور کرائی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...