آئی کیپ چارٹرڈ اکاؤنٹنٹس کا یوم خواتین پر تقریب کا انعقاد ،مریم اورنگزیب کی شرکت

آئی کیپ چارٹرڈ اکاؤنٹنٹس کا یوم خواتین پر تقریب کا انعقاد ،مریم اورنگزیب کی ...

کراچی (اسٹاف رپورٹر ) انسٹی ٹیوٹ آف چارٹرڈ اکاؤنٹنٹس آف پاکستان (آئی کیپ) کی چارٹرڈ اکاؤنٹنٹس ویمن کمیٹی کی جانب سے گزشتہ روز یوم خواتین منایا گیا۔آئی کیپ نے سی اے ویمن ڈائریکٹری 2018 بھی جاری کردی۔ اس سلسلے میں مقامی ہوٹل میں ایک پروقار تقریب منعقد کی گئی جس کی مہمان خصوصی وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب تھیں۔ تقریب کا مقصد اس شعبے میں موجود خواتین کی خدمات کا اعتراف تھا۔ اس موقع پر نائب صدر آئی کیپ جعفرحسین، چیئرپرسن سی اے ویمن کمیٹی حنا عثمانی، ایگزیکٹو ڈائریکٹر ایس ای سی پی بشریٰ اسلم، سی ایف او یونائیٹڈ اسنیکس و کونسل ممبر آئی کیپ افتخار تاج، ممبرز سی اے ویمن کمیٹی اور سینئر چارٹرڈ اکاؤنٹنٹس بھی موجود تھے۔ اپنے استقبالیہ خطاب میں نائب صدر آئی کیپ جعفر حسین نے چارٹرڈ اکاؤنٹنٹس کے پیشے میں خواتین کی ترقی کے بارے میں اظہار خیال کیا اور بتایا کہ آئی کیپ کی جانب سے یہ ایونٹ گزشتہ دو سالوں سے کراچی، لاہور اور اسلام آباد میں منعقد کیا جارہا ہے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے کہاکہ خواتین پاکستان کی نصف سے زائد آبادی ہیں، ان کی شمولیت کے بغیر ملک ترقی نہیں کر سکتا۔ انہوں نے کہاکہ قائداعظم چاہتے تھے کہ پاکستان کی خواتین مردوں کے شانہ بشانہ ملکی ترقی میں کردار ادا کریں۔ قائداعظم اسی عزم کے اظہا رکے لیے اپنی بہن محترمہ فاطمہ جناح کو قیام پاکستان کی جدوجہد کے دوران ہر جگہ اپنے ساتھ رکھتے تھے۔ وزیراطلاعات نے آئی کیپ کو خواتین کے کاذ میں ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا اور کہا کہ خواتین کو خود بھی ایک دوسرے کی مدد کرنی چاہیے۔ ایگزیکٹو ڈائریکٹر ایس ای سی پی بشریٰ اسلم نے ترقی پذیر دنیا میں خواتین کے کردار پر بات کی اور کہا کہ پہلے اس پیشے میں خواتین کم ہوتی تھیں لیکن اب ان کی زیادہ تعداد حوصلہ افزا ہے۔ افتخار تاج نے خطاب کرتے ہوئے شرکاء سے اپنے تجربات بیان کیے۔ چیئرپرسن سی اے ویمن کمیٹی و کونسل ممبر آئی کیپ حنا عثمانی نے کمیٹی کے اغراض و مقاصد بیان کیے۔ انہوں نے کہاکہ آئی کیپ میں اب خواتین کی شمولیت پہلے سے کہیں زیادہ ہے جو انسٹی ٹیوٹ کے مرد اراکین کے تعاون کے بغیر ممکن نہیں تھا۔ 1992 میں ہر 200 مردوں پر ایک ویمن چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ ہوتی تھی لیکن اب یہ شرح کم ہو گئی ہے۔ اب ہر 12 مرد سی اے کے مقابلے میں ایک خاتون چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ موجود ہے تاہم اس میں مزید بہتری کی ضرورت ہے کیونکہ خطے کے دیگر ممالک میں یہ شرح ہر تین مردوں پر ایک سی اے خاتون کی ہے۔ اس موقع پر پینل ڈسکشن بھی منعقد ہوا۔ تقریب کے دوران آئی کیپ کی جانب سے سی اے ویمن ڈائریکٹری 2018 بھی جاری کردی۔ چیئرپرسن سی اے ویمن کمیٹی حنا عثمانی نے ڈائریکٹری مہمان خصوصی وزیراطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب کو پیش کی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر