20اپریل کو سی ایم ہاؤس کا گھیراؤ کریں گے، حافظ نعیم الرحمن

20اپریل کو سی ایم ہاؤس کا گھیراؤ کریں گے، حافظ نعیم الرحمن

کراچی (اسٹاف رپورٹر ) امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن کی زیر صدارت ادارہ نور حق میں امراء اضلاع اور دیگر ذمہ داروان کے اجلاس میں جماعت اسلامی کی جانب سے بجلی کمپنی کے خلاف جاری احتجاجی تحریک کے سلسلے میں جمعہ 20 اپریل کو وزیر اعلیٰ ہاؤس کا گھیراؤ اور بھر پور احتجاج کرنے کے پروگرام کے انعقاد کا جائزہ لیا گیا اور اس حوالے سے مختلف امور اور پہلوؤں پر غور کیا گیا ۔ اجلاس میں طے کیا گیا کہ گھیراؤ اور احتجاج کو بھر پور اور کامیاب بنانے کے لئے بڑے پیمانے پر انتظامات اور تیاریاں کی جائیں گی اور شہر بھر سے کے الیکٹرک کے ستائے ہوئے عوام ، تاجروں اور مختلف طبقات سے وابستہ افراد کی بڑی تعداد میں شرکت کو یقینی بنانے کے لئے ہر ممکن کوشش اور قانونی و جمہوری طریقے اختیار کیے جائیں گے ۔ اجلاس میں جماعت اسلامی کے ہر سطح کے ذمہ داروان اور کارکنان کو ہدایات دی گئیں کہ وزیر اعلیٰ ہاؤس پر احتجاج کے لئے تمام طبقات و شعبہ ہائے زندگی کے افراد اور عوام سے بڑے پیمانے پر رابطے کریں ۔ حافظ نعیم الرحمن نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بجلی کمپنی نے گیس کی کمی کا بہانہ بنا کر کراچی کے عوام کو سخت گرمی کے موسم میں اذیت ناک لوڈشیڈنگ کے عذاب سے دو چار کر دیا ہے ۔ بجلی کمپنی نے اپنی نا اہلی اور ناقص کارکردگی کے باعث شہر میں بجلی کا مصنوعی بحران پیدا کیا ہے ، کے الیکٹرک کی جانب سے جھوٹ اور دروغ گوئی سے کام لیتے ہوئے عوام کو دھوکہ دینے کی کوشش کی جا رہی ہے اور اس سوال کا جواب نہیں دیا جا رہا ہے کہ فرنس آئل پر چلنے والے پیداواری پلانٹس آخر کیوں بند ہیں اور وہ پلانٹس جو گیس اور آئل دونوں سے چل سکتے ہیں ، ان کو گیس کی کمی پر آئل سے کیوں نہیں چلایا جا رہا ۔ انہوں نے کہا کہ کے الیکٹرک برسوں سے عوام سے فرنس آئل کی قیمت کے بلز وصول کر رہی ہے ، لیکن آج گیس کی کمی کے نام پر لوڈشیڈنگ کی ذمہ داری گیس کمپنی پر ڈال رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ سندھ گیس کی فراہمی کے لئے وفاقی حکومت کو خط لکھ کر خود کو بری الذمہ سمجھ رہے ہیں ، لیکن وہ عوام کو دھوکہ نہیں دے سکتے ۔ ان کی ذمہ داری ہے کہ کراچی کے شہریوں کو لوڈشیڈنگ کے عذاب سے نجات دلانے کے لئے کے الیکٹرک سے باز پرس کریں کہ وہ بجلی کی پیداوار میں فرنس آئل کیوں استعمال نہیں کر رہی ۔ انہوں نے کہا کہ ہر دور حکومت میں کے الیکٹرک کو تحفظ فراہم کیا گیا ہے اور یہ سلسلہ آج بھی جاری ہے ، اگر ماضی میں بجلی کمپنی کو اپنی من مانی کرنے کی اجازت نہیں دی جاتی تو آج یہ سنگین صورتحال پیدا نہ ہوتی ۔ انہوں نے کہا کہ 20 اپریل کو وزیر اعلیٰ ہاؤس کا گھیراؤ کیا جائے گا اور 27 اپریل کو کراچی میں ہڑتال کی جائے گی ۔ جماعت اسلامی کی جدوجہد پر امن اور جمہوری جہدوجہد ہے اور عوام کے حق کے لئے ہم احتجاج کا ہر ممکن قانونی طریقہ استعمال کریں گے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر