سرائیکی صوبہ نوشتہ دیوار ‘ دنیا کی کوئی طاقت روک نہیں سکتی ‘ غلام فرید کوریجہ

سرائیکی صوبہ نوشتہ دیوار ‘ دنیا کی کوئی طاقت روک نہیں سکتی ‘ غلام فرید ...

خانپور ‘ عالیوالا‘ ڈیرہ غازیخان ( نمائندہ پاکستان ‘ نامہ نگار‘ سٹی رپورٹر ) وزیراعظم خاقان عباسی سرائیکی صوبے کا مقدمہ خراب کرنے کی بجائے نئے صوبے کیلئے اقدامات کریں۔ان خیالات کا اظہار پاکستان سرائیکی پارٹی اور سرائیکستان قومی کونسل کی طرف سے کوٹسمابہ میں منعقد کی گئی پانچویں سالانہ (بقیہ نمبر33صفحہ12پر )

سرائیکی کانفرنس میں سرائیکی رہنماؤں خواجہ غلام فرید کوریجہ ،ظہور دھریجہ ،نذیر کپٹال ،دْر محمد مستوئی ،مجاہد جتوئی ،ریاض حسین کھرل ،جام فیض اللہ ،سید جاوید نقوی ،زین بھٹی ،جمشید دھریجہ خدابخش کھونہارا،،آصف دھریجہ ،خالد سیال نے خطاب کیا۔نظامت کے فرائض تقریب کے میزبان میاں ارشد رحمانی نے سرانجام دئیے۔سرائیکی سنگر کامران کنول خانپوری نے ترانے پیش کیے۔سرائیکی رہنماؤں نے کہا کہ سرائیکی صوبے کی جدوجہد. پل دو پل کی بات نہیں نصف صدی کا قصہ ہے۔انہوں نے کہا کہ (ن) لیگ والے ایک مرتبہ دو صوبوں کی راگنی الاپ کر کر وسیب کے لوگوں کو ایک دوسرے سے لڑا کر سرائیکی صوبے کی منزل دور کرنے کی کوشش کریں گے لیکن سرائیکی صوبہ نوشتہ دیوار ہے،اسے دنیا کی کوئی طاقت نہیں روک سکتی۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے چاروں صوبوں میں نئے صوبے کی بات کرکے سرائیکی صوبے کا مقدمہ خراب کرنے کی کوشش کی ہے اسکا مطلب ہے نہ ہوگا بانس نہ بجے گی بانسری۔سرائیکی رہنماؤں نے کہا کہ (ن) لیگ سرائیکی صوبے کی تحریک کو سبوتاڑ کرنے کیلئے کراچی میں مہاجر صوبے کا شوشہ چھوڑ رہی ہے جبکہ مہاجر صوبے کا کوئی جواز نہیں،کراچی تو بذات خود صوبائی دارالحکومت ہے ،مہاجروں کو اپنے گھر پر سہولتیں حاصل ہیں،ہم سے پوچھئے کہ ایک طرف ہم صادق آباد اور دوسری طرف ہم ڈی آئی خان تک تخت لاہور اور تخت پشور تک شٹل کاک بنے ہوئے ہیں۔،جمشید دستی وسیب دشمنوں کا آلہ کار کہ اس نے تیل چوری ،بھتہ خوری اور ناجائز ذرائع سے لوٹ کا مال وسیب دشمنوں کے پاس چھپایا ہوا ہے ،اب وہ لوگ اسے ٹشو پیپر کے طور پر استعمال کررہے ہیں۔ اس موقع پر سرائیکی محفل مشاعرہ منعقد ہوا ،معروف سرائیکی شاعر مصطفی خادم کی دستار بندی کرائی گئی ،مشاعرے میں رفیق ساحل،شہزاد عاطر،قیوم انور،شہباز نیر،حامد فریدی ،ہوشو شیدی ،رشید دوستم ودیگر نے اپنا کلام سنایا۔عظیم سرائیکی خدمات پر اہلیان کوٹسمابہ کی طرف سے میاں ارشد رحمانی،ریاض حسین کھرل اور زین بھٹی کو شیلڈز بھی پیش کی گئی۔اس موقع پر سرائیکستان قومی کونسل کی طرف سے مہمانوں کو اجرکیں پہنائی گئیں ،ادارہ جھوک سرائیکی کی طرف سے سرائیکی کتابوں کے گفٹ پیش کیے گئے۔دریں اثنا سرائیکستان قومی اتحاد کے سربراہ پیر آف کوٹ مٹھن خواجہ غلام فرید کوریجہ نے پاکستان سرائیکی پارٹی کے مرکزی نائب صدر اللہ وسایا خان لنگاہ کو عمرہ کی سعادت حاصل کرنے پر مبارکباد دی انکے دفتر میں کارکنان کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا اَپر پنجاب اپنے غاصبانہ نظام کی وجہ سے سرائیکی خطہ کی عوام کو غلام بنانے کے چکر میں ہے جسے ہر حال میں ناکام بنائیں گے اس موقع پر پاکستان سرائیکی پارٹی کے مرکزی نائب صدر اللہ وسایا خان لنگاہ نے خواجہ غلام فرید کوریجہ کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ہم صوبہ سرائیکستان کے قیام کی جدوجہد میں برابر کے شریک ہیں اور خواجہ صاحب کے شانہ بشانہ ہر محاذ پر ڈٹ کر جدوجہد کریں گے۔ اس موقع پر ملک ظفر اقبال ایڈووکیٹ، میاں اللہ بخش، فیض کریم بھٹی، محمد اجمل، شہزاد فریدی، زوہیب حسن لنگاہ، ملک مدنی جڑھ، زریاب حسن، ملک محمد قاسم، راول خان، عبدالحفیظ، عنصر عباس لنگاہ کے علاوہ کثیر تعداد میں کارکنان موجود تھے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر