بستی ملوک ‘ کریانہ سٹور میں آتشزدگی ‘ کروڑوں کی اشیاء لمحوں میں خاکستر

بستی ملوک ‘ کریانہ سٹور میں آتشزدگی ‘ کروڑوں کی اشیاء لمحوں میں خاکستر

بستی ملوک(نمائندہ پاکستان) بستی ملوک شجاع آباد روڈ پر واقع عبدالغنی اینڈسنزکی ہول سیل کریانہ کی دوکان میں صبح 9بجے شارٹ سرکٹ کے باعث آگ بھڑک اٹھی دوکان میں گھی چینی اور شاپر زیادہ تعداد میں موجود تھے جس کے باعث آگ نے شدت اختیار کی آگ عمارت کے دوسرے فلور (بقیہ نمبر34صفحہ12پر )

پرشارٹ سرکٹ کی وجہ سے لگی چندسیکنڈ میں آگ نے پوری دوکان کو اپنی لپیٹ میں لے لیا دکان میں موجود گاہکوں ،ملازمین و مالک نے بھاگ کر اپنی جان بچائی اہلیان علاقہ نے فوری ریسکیو،فائر برگیڈکو اطلاع دی اور اپنی مدد آپ کے تحت آگ پر قابو پانے کی کوششوں میں مصروف ہوگئے مگر آگ مزید پھیلتی گئی جس کے باعث مزید دو دوکانیں بھی متاثر ہوئیں اس موقع پر عوام ایک ہجوم امڈ آیا صورت حال خطرناک ہوگئی ہمراہ نفری ایس ایچ او تھانہ بستی ملوک راشدتھہیم ،پیٹرولنگ پولیس،موٹروے پولیس بھی موقع پر پہنچ گئے اور عوام کو منتشر کیا مگر فائر برگیڈ کی گاڑیاں دو گھنٹے تاخیر سے پہنچیں تاہم اس وقت دوکان میں موجود سامان مکمل طور پر خاکستر ہوچکا تھا مزید تین گھنٹے بعد آگ پر مکمل طور پر قابو پالیا گیاآگ کی شدت کے باعث عمارت بوسیدہ ہوگئی اور اور اوپر والا فلور گر گیا گرونڈ فلور کو بھی ریسکیو اہلکاروں نے خطرناک قرار دیتے ہوئے اندر جانے سے منع کر دیا جائے وقوعہ پر مخدوم جاوید ہاشمی ، ممبر صوبائی اسمبلی رانا طاہر شبیر ،تحریک انصاف کے عمران شوکت ،ڈاکٹر فیاض احمد ملک صدر انجمن تاجران خواجہ شفیق ،راؤ مقیم انجم موقع پر پہنچے اور دوکان مالک سے اظہار ہمدردی کیا خواجہ شفیق اور راؤ مقیم انجم نے کہاکہ بستی ملوک ایک کاروباری مرکز ہے مگر یہاں پر سہولیات کا فقدان ہے ہمارا حکومت پنجاب سے مطالبہ ہے کے یہاں پر فائر برگیڈ کی ایک گاڑی مہیا کی جائے دوکان مالک ظفر غنی کیمطابق 12لاکھ روپے نقد کیش او کم وبیش 4/5کروڑ کا نقصان ہوا ہے

آتشزدگی

مزید : ملتان صفحہ آخر