جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پر فائرنگ وکلاء کی مذمت ، آج ہڑتال کا اعلان

جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پر فائرنگ وکلاء کی مذمت ، آج ہڑتال کا اعلان

ملتان(خبر نگار خصوصی‘ نامہ نگار )ہائیکورٹ وڈسٹرکٹ بارایسوسی ایشنز(بقیہ 39نمبرصفحہ7پر )

ملتان نے جسٹس اعجازالاحسن کے گھر فائرنگ کے واقعہ کی مذمت کرنے کے ساتھ آج ہڑتال اور اجلاس منعقد کرنے کااعلان کیاہے۔اس سلسلے میں گزشتہ روزپریس کرنفرنس کرتے ہوئے صدرہائیکورٹ بارایسوسی ایشن ملتان خالداشرف خان نے کہاہے کہ موجودہ صورتحال میں جب عدلیہ انتہائی اہم مقدمات کی سماعت کررہی ہے یہ وقت کی ضرورت ہے کہ ججز کی سیکورٹی کے لئے حکومت کی جانب سے خصوصی توجہ دی جائے اورایسے واقعات کی روک تھام نہیں کی گئی توایسے واقعات کی براہ راست ذمہ داری حکومت پرعائدہوگی کیونکہ فراہمی انصاف کے اداروں کامحفوظ نہیں ہونا نہ صرف ملک میں قانون کی حکمرانی بلکہ ملک کی سالمیت کے لئے بھی نہایت ضروری ہے۔ جج سپریم کورٹ کے گھرپرایک دن میں 2 مرتبہ فائرنگ کاواقعہ افسوس ناک ہونے کے ساتھ شرمناک بھی ہے صدرڈسٹرکٹ بارملتان ملک محبوب علی سندیلہ نے کہاکہ وکلاء فراہمی انصاف کے ادارے کالازمی جزوہیں وہ اس واقعے کونہ صرف تشویش اورسنجیدگی سے دیکھتے ہیں بلکہ اس امرکابھی اظہارکرتے ہیں کہ اگریہ واقعات پھر ہوئے تووکلاء راست اقدام اٹھائیں گے۔ دریں اثناء ہائیکورٹ بارکی جانب سے ارجنٹ مقدمات کی سماعت کے بعداورڈسٹرکٹ بارایسوسی ایشن کی جانب سے مکمل روزہڑتال نیز ہائیکورٹ بار میں ساڑھے 11 بجے دن اورڈسٹرکٹ بارمیں ساڑھے12 بجے دن احتجاجی اجلاس منعقد کرنے کابھی اعلان کیاگیا اس موقع پردیگر عہدیداربھی موجودتھے۔دریں اثنا جسٹس اعجا ز الحسن کے گھر پر ہونے والی فائرنگ کی وجہ سے آج جہانیاں بار میں مکمل ہڑتال ہوگی اس سلسلے میں بار میں احتجاج بھی کیا جائے گ ا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر