پاناما کیس کے نگران جج جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پر فائرنگ، کیپٹن صفدر بھی میدان میں آگئے ،ایسی بات کہہ دی جس کی جج صاحبان کو بھی توقع نہ ہوگی

پاناما کیس کے نگران جج جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پر فائرنگ، کیپٹن صفدر بھی ...
پاناما کیس کے نگران جج جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پر فائرنگ، کیپٹن صفدر بھی میدان میں آگئے ،ایسی بات کہہ دی جس کی جج صاحبان کو بھی توقع نہ ہوگی

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) رکن قومی اسمبلی اور  مسلم لیگ (ن) نے رہنماء کیپٹن (ر) صفدر نے کہا ہے کہ جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پر فائرنگ ایک گھٹیا کام ہے، تمام عدالتیں اور جج پاکستان کی امانت ہیں۔

نیو ٹی وی کے مطابق میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا سیاستدان آئین بناتے ہیں اور عدالتیں ان کی تشریح کرتی ہیں اور ہم آئین پر فائر نہیں کر سکتے ، ہم ان لوگوں کے خلاف ہیں جو آئین کو پھاڑ کر اسے پھینک دیتے ہیں۔ انہوں نے کہا ہم آئین بنانے والوں اور اس کی تشریح کرنے والوں کے ساتھ ہیں۔

یادرہے کہ ہفتہ کی رات اور اتوار کی صبح ماڈل ٹاؤن میں موجود پاناما کیس کے نگران جج جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پر فائرنگ ہوئی تھی جس کے بعد چیف جسٹس بھی موقع پر پہنچ گئے تھے اور آئی جی پنجاب کو طلب کرلیا جبکہ حکومت پنجاب نےاس واقعے کی تحقیقات کیلئے جے آئی ٹی تشکیل دینے کااعلان کررکھا ہے ۔ 

مزید : علاقائی /اسلام آباد