بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی خدمت میرا فرض اولین ہے: کیپٹن عاصم ملک

بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی خدمت میرا فرض اولین ہے: کیپٹن عاصم ملک

دبئی (طاہر منیر طاہر) خدمت خلق کا جذبہ موجودہو تو اللہ تعالیٰ اپنے بندوں سے اپنی مخلوق کی خدمت کے کام لے لیتا ہے اور اس کے بدلے میں انہیں منفرد اور باعزت مقام عطا کرتا ہے۔ خدمت خلق کے جذبہ سے مامور کیپٹن عاصم ملک دبئی متحدہ عرب امارات میں مقیم ہیں اور عومای خدمت کے سلسلہ میں اپنا منفرد مقام رکھتے ہیں۔ خدمت خلق کا جذبہ کیپٹن عاصم ملک کو اپنے والدمرحوم ڈاکٹر غلام فریدملک کی عوامی سماجی خدمت کو دیکھ کر بیدارہوا۔ کیپٹن عاصم ملک کے والد گرامی ڈاکٹر غلام فرید ملک متحدہ عرب امارات کے قیام سے قبل ہی 1970ءمیں یہاں آگئے تھے۔ ان کو امارات میں آنے والے پرانے ترین پاکستانیوں کا اعزاز حاصل ہے۔ وہ عرصہ دراز تک انٹرنیشنل کرکٹ ICCکے ایمپائر رہے۔ تیس سال بطور کرکٹ ایمپائر خدمات انجام دینے کے ساتھ ساتھ وہ یہاں موجود پاکستانیوں کی فلاح و بہبود کے کام کرتے رہے اور کمیونٹی میں اچھا نام پایا۔ اپنے والد کے نقش قدم پر چلتے ہوئے کیپٹن عاصم نے خدمت خلق کے جذبہ کو اپنا شعار بنالیا اور اپنے والد محترم کی خدمات کے بعد ان کے نقش قدم پر چلتے رہے۔ کیپٹن عاصم ملک خود پیشہ کے اعتبار سے بین الاقوامی سطح کے پائلٹ رہے ہیں۔ انہوں نے پیشہ وارانہ طور پر 70 سے زائد گھنٹے پاکستان میں اور 200 سے زائد گھنٹے 1999ءمیں کینیڈا میں جہاز اُڑایا۔ ان کے پاس کمرشل پائلٹ کا لائسنس بھی ہے جبکہ 2½ سال فلائٹ کیپٹن رہنے کے بعد انہوں نے جاب چھوڑ دی اور بزنس کو اپنالیا۔ اس وقت وہ متحدہ عرب امارات کینیڈا اور دیگر ممالک میں ٹریڈ کررہے ہیں۔ بزنس کے ساتھ ساتھ انہوں نے عوامی فلاح و بہبود کے کاموں کو نہیں چھوڑا بلکہ خدمت خلق کے کاموں کو جاری رکھا۔ ان کی انہی خدمات کو دیکھتے ہوئے حکومت پنجاب کے ادارہ اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب نے انہیں چیف کوارڈینیٹر اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب برائے مڈل ایسٹ مقرر کردیا ہے۔ ان کے نام کا نوٹیفکیشن سرکاری سطح پر جاری ہوچکا ہے اور OPF کی آفیشل ویب سائٹ پر ان کے بارے ضروری انفارمیشن اپ لوڈ کردی گئی ہے۔ نئی ذمہ داریاںملنے پر کیپٹن عاصم ملک نے ایک ملاقات میںب تایا کہ پہلے تو وہ نجی سطح پر محدود انداز میں خدمت خلق کرتے تھے، اب سرکاری عہدہ ملنے پر ان کی خدمات میں اضافہ ہوگیا ہے اور اب وہ بہتر انداز میں اوورسیز پاکستانیز کی خدمت کرسکیں گے۔ کیپٹن عاصم ملک نے بتایا کہ مڈل ایسٹ میں 22 ممالک ہیں جہاں پاکستانیوں کی خاصی تعداد بسلسلہ روزگار موجود ہے جبکہ گلف ممالک میں پاکستانیوں کی تعداد سب سے زیادہ ہے۔ مڈل ایسٹ ممالک میں پاکستانیوں کی تعداد زیادہ ہونے سے یہاں لوگوں کے مسائل بھی زیادہ ہیں۔ لہٰذا بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے مسائل سے آگاہی کے لئے انہوں نے مڈل ایسٹ کے 22ممالک کے دوروں کا پروگرام بنایا ہے۔ اس کے تحت وہ بذات خود ان ممالک میں جاکر پاکستانیوں سے ملیں گے اور ان کے مسائل معلوم کریں گے۔مڈل ایسٹ کے دوروں کے دوران کیپٹن عاصم ملک ان ممالک میں مقیم پاکستانی سفارتخانوں میں سفیروں اور قونصل خانوں میں قونصل جنرلز سے بھی ملاقات کریں گے اور اپنی خدمت پیش کریں گے۔ کیپٹن عاصم ملک نے بتایاکہ اس سلسلہ میں انہوں نے ملاقاتوں کا آغاز یو اے سی سے کردیا ہے۔ ملاقاتوں کی پہلی کڑی میں انہوں نے معظم احمد خان سفیر پاکستان برائے متحدہ عرب امارات اور بریگیڈیئر ریٹائرڈ سید جاوید حسن سے ملاقات کی ہے اور اپنی سروس کے بارے آگاہ کیا ہے۔ سفیر پاکستان اورقونصل جنرل نے کیپٹن عاصم ملک کے جذبہ حب الوطنی اور جذبہ خدمت خلق کو سراہتے ہوئے اپنی طرف سے مکمل حمایت و تعاون کا یقین دلایا ہے۔ قونصلیٹ جنرل آف پاکستان دبئی میں ہیڈ آف چانسلری رانا ثمر جاوید اور ویلفیئر قونصلرز سے بھی انہوں نے تعارفی ملاقاتیں کی ہیں۔ کیپٹن عاصم ملک سب سے پہلے گلف ممالک سعودی عرب، بحرین، قطر، کویت اور مسقط عمان بھی جائیں گے۔

اوپی سی کے زیر اہتمام لوگوں کے مسائل حل کرنے کے سلسلہ میں کیپٹن عاصم ملک نے بتایا کہ انہیں بہت سے ممالک میں مقیم پاکستانیوں کی شکایات ملنا شروع ہوگئی ہیں جن کے حل کے لئے انہوں نے عملاً کوشش شروع کردی ہے اور ذاتی دلچسپی کے ساتھ تمام شکایات اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب کو بھجوادی گئی ہیں جن کا وہ خود فالواپ کریں گے۔ انہوں نے مڈل ایسٹ ممالک میں مقیم پاکستانی سے کہا ہے کہ وہ اپنی شکایات کے حل کے سلسلہ میں مندرجہ ذیل پتوں پر رابطہ کریں

ای میل: captainasim.opc@gmail.com، فون نمبر: 0097156668339, 00923234567836

کیپٹن عاصم ملک نے کہا کہ فی الحال شکایات کنندگان بذریعہ ای میل، فون اور واٹس ایپ رابطہ کریں جبکہ بعدازاں بہت جلد باقاعدہ دفتربھی قائم کردیا جائے گا تاکہ لوگ براہ راست بھی رابطہ کرسکیں۔ کیپٹن عاصم ملک نے بتایا کہ اوورسیز پاکستانی کمیشن پنجاب او پی سی نیا ادارہ ہونے کے باوجود بے حد فعال ثابت ہورہا ہے اور اس ادارہ کے ذریعے اب تک ہزاروں اوورسیز پاکستانیز کے پرانے پرانے مسائل حل ہوئے ہیں۔ وزیراعلیٰ پنجاب جناب میاں محمد شہباز شریف کا قائم کردہ یہ ادارہ اوورسیز پاکستانیز کے لئے ایک تحفہ ہے جس کے ثمرات ملنا شروع ہوگئے ہیں۔ اس ادارہ کے ذریعے لوگوں کی زمینیں، جائیدادیں، مکانات، دکانات وغیرہ جبری قبضہ سے واگزار کراکر اصل مالکان کے حوالے کی گئیں ہیں۔ بہت سے عدالتی مقدمات کو بھی تیز رفتاری کے ساتھ نمٹایا گیا ہے۔ او پی سی کے قیام سے اوورسیز پاکستانیز کی ایک بہت بڑی مشکل حل ہوگئی ہے اور ان کے مسائل کے حل کے لئے ادارہ موجود ہے۔ جس کا سارا سہرا محمد شہباز شریف کے سرجاتا ہے جنہیں ہم خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔

کیپٹن عاصم ملک نے کہا کہ OPCکے وائس چیئرمین سینیٹر کیپٹن شاہین خالد بٹ بھی او پی سی میں خاصی دلچسپی لے رہے اور ذاتی کوشش سے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے مسائل حل کررہے ہیں۔ انہوں نے اپنی تعیناتی پر کیپٹن شاہین خالد بٹ کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں جو ذمہ داریاں سونپی گئی ہیں وہ اسے ہر ممکن پورا کریں گے۔

کیپٹن عاصم ملک نے کہا کہ انہوں نے بچپن سے لے کر اب تک کا عرصہ بیرون ملک ہی گزارا ہے لہٰذا وہ اوورسیز پاکستانیز کے مسائل سے بخوبی آگاہ ہیں اور ان کے مسائل کے حل کا ارادہ رکھتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ وہ اوورسیز پاکستانیز کے مسائل کو حل کرنے کے ساتھ امارات اور گلف ممالک کی تمام جیلوں میں بند پاکستانیوں کی تعداد کا اندازہ لگانے کے لئے ان ممالک کا دورہ کررہے ہیں اور اس کوشش میں ہیں کہ اگلے چند ماہ میں محدود سزاﺅں والے قیدیوں کو رہائی دلا کر پاکستان بھجوایا جاسکے۔ کیپٹن عاصم ملک نے کہا کہ وہ اوورسیز پاکستانیز کو پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے کی ترغیب دلانے کے لئے گلف ممالک میں سیمینار کرانے کا ارادہ رکھتے ہیں جبکہ گلف ممالک پاکستانیوں کی حالت کا اندازہ لگانے اور بہتر اقدامات کرنے کے لئے لیبر کیمپوں کا بھی دورہ کیا جائے گا۔ تعلیمی اور صحت کے مسائل جانچنے کے لئے بھی سفارتخانوں اور قونصل خانوں سے اعدادوشمار اکٹھے کرنے کے لئے رابطہ کیا جارہا ہے۔ کیپٹن عاصم ملک نے کہا کہ بیرون ملک مقیم پاکستانی اپنے مسائل کے حل کے سلسلہ میں ان سے ضرور رابطہ کریں اور مسائل سے آگاہ کریں تاکہ اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب کے ذریعے ان کے مسائل کا حل نکالا جاسکے۔

مزید : عرب دنیا

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...