اپنی مردہ ساس کی چیزوں سے نجات پانے کی خواہش خاتون کو بہت مہنگی پڑی، کروڑوں کا نقصان ہوگیا کیونکہ۔۔۔ وہ خبر جو تمام شادی شدہ خواتین کو ضرور پڑھنی چاہیے

اپنی مردہ ساس کی چیزوں سے نجات پانے کی خواہش خاتون کو بہت مہنگی پڑی، کروڑوں ...
اپنی مردہ ساس کی چیزوں سے نجات پانے کی خواہش خاتون کو بہت مہنگی پڑی، کروڑوں کا نقصان ہوگیا کیونکہ۔۔۔ وہ خبر جو تمام شادی شدہ خواتین کو ضرور پڑھنی چاہیے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک خاتون اپنی متوفی ساس کے پرانے زیورات اور دیگر اشیاءکے انبار سے عاجز آ گئی اوراٹھا کر وہ اشیاءفلاحی ادارے کو عطیہ کر دیں۔ بعدازاں ان اشیاءکے متعلق ایسا انکشاف منظرعام پر آ گیا کہ خاتون کو زندگی کا سب سے بڑا جھٹکا لگ گیا اور بیٹھے بٹھائے کروڑوں روپے کا نقصان کروا بیٹھی۔ میل آن لائن کے مطابق خاتون اپنی ساس کے زیورات اور دیگر چیزیں جنہیں وہ انتہائی کم وقعت سمجھ رہی تھی جب فلاحی تنظیم کے پاس پہنچیں اور انہوں نے ان کی مالیت کا تخمینہ لگوانے کے لیے 35سالہ گیریتھ ویسپ نامی ماہر کو بلایا تو اس نے چیزوں کو دیکھ کر ان میں موجود دو انگوٹھیاں الگ کر دیں اور بتایا کہ ان میں سے ایک انگوٹھی 4قیراط ہیرے کی تھی اور ایک نیلم کی، اور ان دونوں کی مالیت 70ہزار پاﺅنڈ(تقریباً1کروڑ 15لاکھ42ہزار روپے) ہے۔

رپورٹ کے مطابق خاتون جس سامان کو کباڑ کا مال سمجھ کر فلاحی ادارے کے پاس پھینک گئی تھی تاکہ وہ کسی غریب کے کام آ سکے اس میں سے نکلنے والی ہیرے کی انگوٹھی نیلامی میں 42ہزار پاﺅنڈ (تقریباً 69لاکھ25ہزار روپے) میں فروخت ہوئی جبکہ نیلم والی انگوٹھی 28ہزار پاﺅنڈ(تقریباً46لاکھ 16ہزار روپے) میں بکی۔ اشیاءکی قیمت کا تخمینہ لگانے والے گیریتھ کا کہنا تھا کہ ”اگر خاتون اشیاءعطیہ کرنے سے پہلے خود ان کا تخمینہ لگوا لیتی تو اتنے بڑے نقصان سے بچ جاتی۔ اب یہ رقم غریب لوگوں کے کام آئے گی۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس /برطانیہ