حکومت نے اب ایسا کام کرنے کا فیصلہ کرلیا کہ جان کر ہر پاکستانی کی آنکھوں میں آنسو آجائیں گے، ہر شہری پر بوجھ اتنا بڑھ جائے گا کہ۔۔۔

حکومت نے اب ایسا کام کرنے کا فیصلہ کرلیا کہ جان کر ہر پاکستانی کی آنکھوں میں ...
حکومت نے اب ایسا کام کرنے کا فیصلہ کرلیا کہ جان کر ہر پاکستانی کی آنکھوں میں آنسو آجائیں گے، ہر شہری پر بوجھ اتنا بڑھ جائے گا کہ۔۔۔

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستانی معیشت اندرونی و بیرونی قرضوں کے بوجھ تلے دبی سسک رہی ہے اور مہنگائی کا ایک طوفان آیا ہوا ہے۔ ایسے میں پاکستانی حکومت نے ایک اور ایسا کام کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے کہ سن کر پاکستانیوں کے اوسان خطا ہو جائیں گے۔ اخبار ایکسپریس ٹربیون کی رپورٹ کے مطابق حکومت نے آئندہ مالی کے لیے ریکارڈ 13ارب ڈالر (تقریباً14کھرب روپے) قرض لینے کا فیصلہ کر لیا ہے، جو کسی بھی ایک مالی سال میں لیے گئے قرض سے 63فیصد زیادہ ہو گا۔

یوٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

رپورٹ کے مطابق وزار ت خزانہ کے ذرائع نے بتایا ہے کہ یہ قرض 2018-19ءکے بجٹ کے لیے لیا جا رہا ہے جو حکومت 27اپریل کو قومی اسمبلی میں پیش کرنے جا رہی ہے۔اگر حکومت یہ قرض حاصل کرنے میں کامیاب ہو جاتی ہے تو یہ پاکستان کی 71سالہ تاریخ کا کسی ایک سال میں لیا گیا بلند ترین قرض ہو گا۔ “ واضح رہے کہ اسی حکومت نے مالی سال 2016-17ءمیں 10.4ارب ڈالر(تقریباً11کھرب روپے) قرض لیا تھا۔پاکستان کے آئندہ بجٹ کے بارے میں کچھ عرصہ قبل آئی ایم ایف نے اپنی رپورٹ میں بتایا تھا کہ اس کا کرنٹ اکاﺅنٹ خسارہ جی ڈی پی کا 4.4فیصد ہو جائے گا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /علاقائی /اسلام آباد