قومی عدالتی پالیسی میں ترامیم کیخلاف وکلاء کی لاہور میں بھی ہڑتال

قومی عدالتی پالیسی میں ترامیم کیخلاف وکلاء کی لاہور میں بھی ہڑتال

  



لاہور(نامہ نگار خصوصی) قومی عدالتی پالیسی میں ترامیم کے خلاف ملک بھر کی طرح لاہور کے وکلاء نے بھی ہڑتال کی ،ہڑتال کی کال پاکستان بارکونسل اورچاروں صوبائی بار کونسلوں نے دے رکھی ہے ،ہڑتال سے ہزاروں مقدمات کی سماعت متاثرہوئی اورسائلین کو مشکلات کا سامنا کرناپڑا۔قومی عدالتی پالیسی میں ترامیم کے خلاف لاہور ہائیکورٹ، سیشن، سول اور خصوصی عدالتوں میں وکلاء کی اکثریت اپنے مقدمات کی پیروی کے لئے پیش نہیں ہوئی۔پنجاب بار کونسل کے وائس چیئرمین شاہ نوازنے کہا ہے کہ جوڈیشل پالیسی میں کی گئی ترامیم واپس نہ لی گئیں تو وکلاء ہڑتال کا سلسلہ جاری رکھیں گے ۔انہوں نے کہا کہ وکلاء کے لئے سیشن کورٹس سے اندراج مقدمہ کا اختیارواپس لینے اورماڈل کورٹس کے قیام سے متعلق قومی عدالتی پالیسی کی ترامیم قابل قبول نہیں،انہوں نے کہا کہ پاکستان بارکونسل نے فیصلہ کیا ہے کہ ماڈل کورٹس میں پیش ہونے والے وکلاء کے لائسنس منسوخ کردیئے جائیں گے ۔

ترامیم؍ ہڑتال

مزید : صفحہ آخر


loading...