سرکاری اداروں سے کالی بھیڑوں کا صفایامیرا مشن،ڈی جی اینٹی کرپشن

سرکاری اداروں سے کالی بھیڑوں کا صفایامیرا مشن،ڈی جی اینٹی کرپشن

  



لاہور(سپیشل رپورٹر)ڈائریکٹر جنرل اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ پنجاب اعجاز حسین شاہ نے میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ حکومت پنجاب کے ویژن کے مطابق بڑے بڑے مگرمچھوں پر ہاتھ ڈال کر قومی خزانہ سے لوٹی گئی دولت واپس لائی جائے گی،محکمہ اینٹی کرپشن تمام سرکاری اداروں کے کرپٹ افسران کی بابت سورس رپورٹ تیار کرکے ان کے خلاف بھرپور کارروائی کی جائے گی،پرانے مقدمات کو ترجیحی بنیادوں پرنمٹانا ان کی اولین ترجیحات میں شامل ہے ، ان تعیناتی کا مقصد سرکاری اداروں میں موجود کالی بھیڑوں کا صفایا کرنا ہے اور اینٹی کرپشن کے مورال کو لوگوں کی نظر میں بلند کرنا ہے۔تفصیلات کے مطابق ڈی جی اینٹی کرپشن پنجاب کا کہنا تھا کہ موجودہ حکومت کا کرپشن فری پاکستان ویژن ہی ان کا مقصد ہے،سرکاری اداروں کے کرپٹ افسروں کے ہاتھوں یرغمال بننے والے شہریوں کوانصاف کی فوری فراہمی بھی ان کے منشور میں شامل ہے۔اینٹی کرپشن رولز ،شہریوں کوانصاف کی جلد فراہمی ،ادارے کو درپیش مسائل ،مقدمات کے اندراج ،دوبارہ تفتیش کے مراحل اورپنجاب بھر کے 9ریجنز کے ڈائریکٹر زسے ادارہ کی بہتری کے لئے تجاویز اور دیگر معاملات کا بغور جائزہ لے لیاہے ، اب حکومت پنجاب کے نئے پاکستان کے ویژن کے مطابق اس پرعمل کیا جائے گا،انہوں نے کہا کہ اس وقت بعض افسران بوکھلاہٹ کا شکار ہیں ، ان کے دلوں پریہ خوف دور کرنا بھی وہ اپنی ذمہ داری سمجھتے ہیں ،محکمہ اینٹی کرپشن میں موجود کرپٹ عناصر اپنا قبلہ درست کرنے کے ساتھ ساتھ اپنا اوقات کار بھی ٹھیک کرلیں اور ہر آنے والے شریف شہری کی عزت نفس کا خاص خیال رکھا جائے ۔ پنجاب بھر کے تمام سرکاری اداروں میں بیٹھے ہوئے کرپٹ مافیا کا گھیراؤ کریں گے ۔

ڈی جی اینٹی کرپشن

مزید : صفحہ آخر


loading...