پاکستان اور برطانیہ طویل المدتی اور کثیر جہتی شراکت داری کو مزید فروغ دیں: عمران خان

پاکستان اور برطانیہ طویل المدتی اور کثیر جہتی شراکت داری کو مزید فروغ دیں: ...

  



اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاک برطانیہ دیرینہ تعلقات تاریخی روابط اور وسیع تر علاقائی و بین الاقوامی امور پر یکساں سوچ پر مبنی ہیں، دونوں ممالک کو موجودہ طویل مدتی اور کثیر جہتی شراکت داری کو مزید فروغ دینے کی ضرورت ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایوان وزیراعظم میں برطانیہ کی کنزرویٹو پارٹی کے چیئرمین رکن پارلیمنٹ برینڈن لیوس سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان یورپ میں برطانیہ کو اہم ترقیاتی اور تجارتی و سرمایہ کاری شراکت دار تصور کرتا ہے۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ دونوں ممالک کو بالخصوص بعد از ’’بریگزٹ‘‘ موجودہ طویل مدتی اور کثیر جہتی شراکت داری کو مزید فروغ دینے کی ضرورت ہے۔ برطانیہ میں پاکستانی برادری کو دونوں ممالک کے درمیان پل قرار دیتے ہوئے وزیراعظم نے اس امر پر اطمینان کا اظہار کیا کہ یہ برطانوی معاشرہ میں مثبت کردار ادا کر رہی ہے۔ وزیراعظم نے بھارت اور افغانستان سمیت علاقائی صورتحال کا جائزہ پیش کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اپنے تمام ہمسایوں کے ساتھ پرامن تعلقات اور بات چیت کے ذریعے تمام مسائل کے حل کا خواہاں ہے۔ انہوں نے مقبوضہ کشمیر میں ہر روز بھارتی افواج کے ہاتھوں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو بھی اجاگر کیا۔ کنزرویٹو پارٹی کے چیئرمین نے وزیراعظم سے اتفاق کیا کہ ’’بریگزٹ‘‘ سے قطع نظر پاکستان اور برطانیہ تجارتی و سرمایہ کاری روابط کو تقویت دینے کی بہت زیادہ صلاحیت رکھتے ہیں۔ انہوں نے پلوامہ واقعہ کے بعد صورتحال سے نبرد آزما ہونے کے حوالہ سے وزیراعظم کی قیادت کی تعریف کی۔ انہوں نے برطانوی وزیراعظم تھریسامے کی طرف سے وزیراعظم عمران خان کو برطانیہ کے دورہ کی دعوت کا اعادہ بھی کیا۔دریں اثناء وزیراعظم عمران خان نے میڈیاسٹریٹیجی کمیٹی کے اجلاس میں وفاقی وزرا کو وزارتوں کی کارکردگی عوام تک پہنچانے اور حکومتی اورپارٹی ترجمان بغیر تیاری کے ٹاک شوز پر نہ جانے کی ہدایت کردی ۔ اجلاس میں وزیراطلاعات فواد چودھری، یوسف بیگ مرزا، ندیم افضل چن و دیگرشریک ہوئے۔اجلاس میں حکومت کی میڈیاحکمت عملی پرتفصیلی غورکیاگیا اور وزیراعظم نے وفاقی وزرا کو وزارتوں کی کارکردگی عوام تک پہنچانے اور حکومتی اورپارٹی ترجمان بغیرتیاری کے ٹاک شوزپرنہ جانے کی ہدایت کی۔اجلاس میں وزارتوں کی کارکردگی اور اقدامات پر ترجمانوں کو متواتر بریفنگ دینے کا فیصلہ کیا گیا اور اس سلسلے میں فواد چودھری، یوسف بیگ مرزا، ندیم افضل چن اور فردوس عاشق اعوان پر مشتمل میڈیا ٹیم تشکیل دے دی گئی ۔علاوہ ازیں وزیراعظم عمران خان سے سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے وفد نے ملاقات کی، وفد نے وزیراعظم عمران خان کے وژن اور حکومت کے اصلاحاتی ایجنڈے کو سراہا۔ وفد نے پاک بھارت کشیدگی کے دوران وزیراعظم کے قائدانہ کردار کو بھی سراہا،بارایسوسی کی درخواست پر وزیراعظم عمران خان نے بار ممبران کیلئے صحت انصاف کارڈ کی فراہمی کا اعلان کیا، وزیراعظم عمران خان نے وفد ارکان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عام آدمی کو انصاف کی فراہمی یقینی بنانے میں وکلاء کا کلیدی کردار ہے، مضبوط بار ناصرف مستحکم عدلیہ بلکہ گڈگورننس میں بھی اہم کردار ادا کرتی ہے،حکومت بار ایسوسی ایشنز کے مسائل کے حل میں ہر ممکن مدد فراہم کرے گی، بلوچستان کے وکلاء کو جائز حقوق کی فراہمی کیلئے مکمل تعاون فراہم کریں گے۔

وزیراعظم عمران خان

مزید : صفحہ اول