شریف خاندان کو اگر جیل جانے سے ڈرلگتا ہے تو قوم کا پیسہ واپس کر دے: فواد چودھری

شریف خاندان کو اگر جیل جانے سے ڈرلگتا ہے تو قوم کا پیسہ واپس کر دے: فواد چودھری

  



اسلام آباد(سٹاف رپورٹر ) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چودھری نے کہا ہے کہ ملٹری کورٹس نہیں ہونی چاہئیں مگر غیر معمولی حالات میں ان کی ضرورت ہوتی ہے ، اپوزیشن کو اس معاملے پر سوچنا چاہئے،آئی ایم ایف پیکیج فائنل ہو گیا اس سے غریب کو نقصان نہیں ہو گا۔ نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے فواد چودھری نے کہا ہے کہ وزیر خزانہ اسد عمر نے بتایا ہے کہ آئی ایم ایف پیکیج فائنل ہو گیا ہے اور اس حوالے سے آئی ایم ایف کا اعلامیہ بھی آ چکا ہے جبکہ معیشت سے لاعلم لوگ بھی حکومت پر تنقید کر رہے ہیں، ٓائی ایم ایف سے ہونے والا معاہدہ مناسب ہے اور اس معاہدے سے غریب آدمی کو نقصان نہیں ہو گا۔ مفتاح اسماعیل اور اسحاق ڈار کو 20 برس تک معیشت پر تنقید نہیں کرنی چاہئے۔ انہوں نے کہاکہ شریف فیملی نے کرپشن کے نئے طریقے ایجاد کئے اور اس مقصد کیلئے انہوں نے قوانین بھی منظور کروائے ،شہباز شریف قوم کا پیسہ ملک سے باہر لے کر گئے جبکہ عام آدمی چاہتا ہے کہ قوم کا لوٹا ہوا پیسہ واپس آئے ۔وفاقی وزیر نے کہا کہ پلی بارگین قانون میں موجود ہے اور شریف خاندان کو اگر جیل جانے سے ڈر لگتا ہے تو قوم کا پیسہ واپس کر دیں۔ فواد چودھری نے کہا کہ نواز شریف اور آصف زرداری میڈیا کی پروا نہیں کرتے تھے جبکہ وزیراعظم عمران خان میڈیا کی رائے کا احترام کرتے ہیں۔قبل ازیں اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چودھری نے کہا ہے کہ غیر ملکی کمپنیاں سرمایہ کاری میں دلچسپی لے رہی ہیں، آئندہ کا دور جدید ٹیکنالوجی کا دور ہے، ہم نے آگے بڑھنا ہے تو ہم کو سرسید احمد خان کی سوچ کو اپنانا ہو گا۔وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ اگر ہم نے ٹیکنالوجی پر توجہ نہیں دی تو ہم بہت پیچھے رہ جائیں گے۔ ہمیں اپنی ٹیکنالوجی کی کمپنیوں کو نہ صرف آگے لانا ہے بلکہ اپنے بچوں کو بھی ٹیکنالوجی کی تعلیم دینی ہے اور سہولیات فراہم کرنی ہیں۔انہوں نے کہا کہ اب مستقبل ٹیکنالوجی کا ہے تو اب یہ ہمارے آئی ٹی وزارت کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ کس تیزی سے اس پر کام کرتے ہیں کیونکہ اب ہم اس کو نظر انداز نہیں کر سکتے۔وفاقی وزیر نے کہا کہ اس وقت ایک چائنہ کمپنی 14.8 ارب ڈالر ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ پر خرچ کر رہا ہے۔ جو پاکستان کے ٹوٹل ایکسپورٹ کا آدھا ہے جو صرف ایک چائنیز کمپنی خرچ کر رہی ہے۔

فواد چودھری

مزید : صفحہ اول


loading...