پرائیوٹائز کرنے کے خلاف : واساکے سینکڑوں ملازمین کا ایم ڈی اوروی سی کا گھیراؤ

پرائیوٹائز کرنے کے خلاف : واساکے سینکڑوں ملازمین کا ایم ڈی اوروی سی کا ...

  



لاہور( جنرل رپورٹر)واسا میں سی بی اے یونین کے سینکڑوں ملازمین نے اپنے رہنماؤں کی قیادت میں واسا کے ایم ڈی اور وائس چیئرمین کا گھیراؤ کر لیا ڈنڈوں سے لیس درجنوں نوجوان اپنے مطابات کے حق میں افسروں کے دفتروں میں داخل ہو گئے اور دھرنا دیا اور انتظامیہ کے خلاف مسلسل نعرے بازی کرتے رہے مظاہرین نے کہاکہ انتظامیہ ادارہ کو پرایؤٹ شعبہ کے حوالے کرنا چاہتی ہے جسے نہیں ہونے دیں گے احتجاج کرنے والے ملازمین کو انتقامی کاروائی کا نشانہ بنایا جارہا ہے ان کو شوکاز دیئے جارہے ہیں اور ان کے تبادلے کیئے جا رہے ہیں۔مظاہرین کے اندر داخل ہوتے ہی افسر اپنے کمرے چھوڑ کر بھاگ گئے اس دوران یونین اور افسروں میں ہاتھاپائی بھی ہوئی اس حوالے سے انتظامیہ کا کہنا ہے کہ حال ہی میں کرپٹ ملازمین کو شوکاز نوٹس جاری کرنے کے ردعمل میں سی بی اے پھول یونین کی سرپرستی میں ہجوم کا واسا ہیڈ آفس پر دھاوا۔ غنڈوں کی مدد سے ہجوم نے توڑ پھوڑ کی اور سرکاری املاک و سرکاری گاڑیوں کو بھی نقصان پہنچایا۔ ہلڑ بازوں نے وائس چئیرمین واسا کے دفتر پر حملہ کیا اور سٹاف کو حبس بے جا میں رکھا اور تشدد کا نشانہ بھی بنایا ۔ وائس چئیرمین واسا شیخ امتیاز محمود کے ساتھ بداخلاقی ، دفاتر پر حملہ اور سرکاری املاک و مشینری کو نقصان پہنچانا دہشت گردی کہ زمرے میں آتا ہے ۔ ذمہ دار عناصر کے خلاف سختی قانونی کاروائی عمل میں لائی جارہی ہے۔اس موقع پر واسا انتظامیہ کا کہنا ہے کہ واسا کو پرائیویٹ کرنے کی کوئی سمری زیر غور نہیں۔ جہاں تک ملازمین کے جائز حقوق پر مبنی کوئی بھی جائز مطالبہ ہو اُسے حل کیا جارہا ہے اور کیا جائے گا۔ لیکن کرپٹ عناصر کیساتھ کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی۔ ایسے تمام اشخاص چاہے وہ واسا کہ ملازم ہو ں یا نہ ہوں اُن کے واسا کے خلاف غیر قانونی اقدام پر سختی سے نوٹس لیا جارہا ہے۔ اپنے ملازمین ، مشینری اور املاک کی حفاظت کرنا واسا کی اولین ذمہ داری ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...