سمندر میں طوفانی ہواؤں کی وجہ سے 2کشتیاں ڈوب گئیں

سمندر میں طوفانی ہواؤں کی وجہ سے 2کشتیاں ڈوب گئیں

  



کراچی(کرائم رپورٹر)سمندر میں چلنے والی طوفانی ہواں کی وجہ سے 2کشتیاں ڈوب گئیں،3ماہی گیروں کو بچا لیا گیا جبکہ 12ماہی گیر تاحال لا پتہ ہیں جن کی تلاش کا کام جاری ہے۔چیئرمین فشر مینز کو آپریٹو سوسائٹی عبدالبر نے المناک حادثے پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔تفصیلات کے مطابق اتوار اور پیر کی درمیانی شب سمندر میں چلنے والی طوفانی ہواؤں کی وجہ سے ساحلی علاقے گاڑو کے قریب ڈبہ اور چھان کے مقام پر لنگر انداز الجیلانی چھوٹی کشتی نمبر 17176رات 2بجے کے قریب ڈوب گئی۔کشتی میں سوار 11ماہی گیر لاپتہ ہو گئے۔سمندری حدود کی نگرانی کے ذمہ دار ادارے لاپتہ ماہی گیروں کو تلاش کر رہے ہیں۔الجیلانی نامی کشتی میں سوار کشتی کے مالک عزیز شیخ،رفیق ولد عالم،نزیر،حسین ولد منصور،اقبال ولد محمد علی،یحیی ولد حاجی احمد،عبدالستار،ولد قاسم اور جمن ولد امین کے نام معلوم ہوئے ہیں جبکہ دوسراحادثہ کورنگی کے قریب واقع سمندری علاقے میں پیش آیا۔جہاں بے رحم تیز طوفانی ہواں نے ایک چھوٹی کشتی کو الٹ دیا جس میں 4ماہی گیر سوار تھے،یہ حادثہ بھی اتوار اور پیر کی درمیانی شب رات تقریبا ایک بجے پیش آیا۔اس کشتی میں ناکوا محمد صدیق، بابل، محمد عالم اور نورالاسلام سوار تھے۔تین ماہی گیروں محمد صدیق، بابل اور محمد عالم کو بچا لیا گیا جبکہ نورالاسلام تاحال لاپتہ ہے۔زندہ بچ جانے ماہی گیروں نے بتایا کہ جب ان کی کشتی کو طوفانی ہواؤں نے الٹ دیا تو ان تینوں نے کشتی کو پکڑے رکھا اور سمندر کی تیز بے رحم موجوں کا مقابلہ کرتے رہے۔مگر ان کا چوتھا ساتھی نورالاسلام سمندر کی تیز لہروں کا مقابلہ نہ کر سکا۔اور وہ ان سے بچھڑ گیا۔زندہ بچ جانے والے ماہی گیرناکوا محمد صدیق نے بتایا کہ پیر کی صبح تقریبا 9بجے عبداللہ کچھی نامی ماہی گیر کشتی نے وہاں پہنچ کر ان کی جانیں بچائیں۔چیئرمین فشر مینز کو آپر یٹو سوسائٹی عبدالبر نے ان المناک حادثات پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ لاپتہ ماہی گیروں کی تلاش کا کام جاری ہے۔اس المناک حادثے کے موقع پر جہاں ایف سی ایس انتظامیہ دکھی ہے ۔چیئرمین ایف سی ایس نے کہا کہ دکھ کی اس گھڑی میں فشر مینز کو آپریٹو سوسائٹی لاپتہ ماہی گیروں کے ورثا کے ساتھ کھڑی ہے اور تمام ممکنہ سہولیات انہیں پہنچانے کے لیے کوئی کسر اٹھا نہیں رکھی جائے گی۔چیئرمین ایف سی ایس عبدالبر نے مزید کہاکہ سمندر میں موجود 273چھوٹی بڑی کشتیوں کو واپس بلا لیا گیا ہے جو کہ کل صبح تک واپس پہنچ جائیں گی۔

مزید : صفحہ اول


loading...