خیبر پختونخوااسمبلی کا اجلاس، کوئٹہ شہدا ء سے اظہار یکجہتی

خیبر پختونخوااسمبلی کا اجلاس، کوئٹہ شہدا ء سے اظہار یکجہتی

  



پشاور( نیوز رپورٹر)خیبر پختونخوا اسمبلی کا اجلاس ڈپٹی سپیکر محمود جان کی صدارت میں ڈیڑھ گھنٹہ کی تاخیر سے شروع ہوا پی پی پی کی خاتون رکن نگہت اورکزئی نے نکتہ اعتراض پر کوئٹہ اور چمن میں ہونے والے خودکش حملے اور دہشت گردی کے واقعات کا ذکر کرتے ہوئے شہداء کے ساتھ یکہتی کا اظہار کیا اور کہا کہ اس حوالے سے ایک قرار داد لائی جائے انہوں نے خالد مقبول کے بیانات کی مذمت کی اور کہا کہ وہ غیر ملکی ایجنٹ ہے ،اپوزیشن کے عنایت اللہ نے کہا کہ یہ واقعات پاکستان کو غیر مستحکم کرنے کیلئے ہیں پاکستان دشمن ان واقعات سے شیعہ سنی فسادات اور پاکستان کو کھوکھلا کروانا چاہتے ہیں انہوں نے کہا کہ عوام کے جان ومال کا تحفظ حکومت اور ریاست کی ذمہ داری ہے حکومت ان واقعات کے تہہ اور اس کی پشت پر مقاصد تک پہنچنا چاہئے انہوں نے کہا کہ ہم ہزارہ کمیونٹی کے دکھ درد میں ان کے ساتھ ہیں انہوں نے کہا کہ امن کو دوبارہ سبوتاژ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے حکومت ذمہ داری پوری کرے انہں نے اس حوالے سے قرار داد کی حمایت کی ،صوبائی وزیر قانون سلطان محمد نے کہا کہ یہ انتہائی اہم قومی ایشو ہے واقعے میں ہزارہ کمیونٹی کے زیادہ لوگ شہید ہوئے تاہم مری قبائل کے لوگ اور ایف سی اہلکار بھی شہید ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان خطے کا اہتم ترین ملک ہے مسلم لیگ ن کے رکن سردار خان نے توجہ دلاؤ نوٹس کا مطالبہ کیا کہ ان کے حلقہ نیابت پی کے 3 سوات میں ترقیناتی سکیموں کا افتتاح غیر منتخب افراد کے ذریعے کرانے کا سلسلہ بند کیا جائے تاکہ عوام اور ورکروں میں فساد کی کیفیت ختم ہوسکے اے این پی کی خاتون رکن شگفتہ ملک نے خیبر پختونخوا چائیلڈ پروٹیکیشن کمیشن کی بارہ اضلاع میں بندش کا معاملہ توجہ دلاؤ نوٹس کے ٓذریعے ایوان میں اٹھایا اور مطالبہ کیا کہ مسئلے کا حل تلاش کیا جائے ،اے این پی کے خوشدل خان نے نکتہ اعتراض پر سرکاری افسران کی دفاتر میں عدم موجودگی کا معاملہ اٹھایا ،وزیر اعلیٰ کی جانب سے وزیر قانون سلطان محمد نے خیبر پختونخوا ریونیو سیٹز (ترمیمی ) بل فوری طور پر ایوان میں زیر غور لانے اور منظور کرنے تحریک پیش کیں ،یوان نے بل کی منظوری دے دی مہنگائی اور بیروزی گاری پر عام بحث جاری رکھتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف کی سابقہ حکومت نے ایشیائی ترقیاتی بنک سے 80 ارب روپے کا قرضہ لیا جس پر سالانہ 24 ارب 75 کروڑ روپے کا سود ادا کرے گا اس طرح بی آر ٹی منصوبے کیلئے 33 ارب 50 کروڑو کا قرضہ لیا گیا ہے کرم پورا نہ ہونے کی وجہ سے اجلاس کل سہ پہر تک ملتوی کردیا گیا۔

مزید : صفحہ اول


loading...