ایف بی آر متحرک،رجسٹری برانچ ملتان کا گھیرا تنگ، اکاؤنٹس فریز، ریکوری کا فیصلہ

ایف بی آر متحرک،رجسٹری برانچ ملتان کا گھیرا تنگ، اکاؤنٹس فریز، ریکوری کا ...

ملتان(نیوز رپورٹر ) رجسٹری برانچ ملتان میں نان فائلرز کو فائلر ظاہر کرکے ود ہولڈنگ ٹیکس کی مد میں حکومتی محاصل پر شب خون مارنے کا سلسلہ اپنے عروج پر ہے آر ٹی او ذرائع کے مطابق رجسٹری برانچ کے ذمہ دار کروڑوں روپے ٹیکس ڈیفالٹر ہونے کے باوجود ریکارڈ دینے سے گریزکر رہے ہیں۔ رجسٹری برانچ ملتان آر ٹی او کی دو کروڑ روپے سے زائد کی ڈیفالٹر ہے جہاں رجسٹریوں کی مد میں نان فائلرز سے مکمل فیس وصولی کے بعد ایف بی آر کو فائلر والی فیس(بقیہ نمبر30صفحہ12پر )

وصولی کا بتایا جاتا ہے اس بارے جب ریکارڈ مانگا جائے تو افسران سمیت تمام عملہ ٹال مٹول سے کام لیتا ہے جبکہ اس کے باوجود بھی رجسٹری برانچ 2 کروڑ 28 لاکھ روپے سے زائد کی ڈیفالٹر ہے جسے کئی بار نوٹس بھجوائے گئے مگر کوئی جواب موصول نہیں ہوا جس پر ایف بی آر نے رجسٹری برانچ کے اکاؤنٹس فریز کرکے ریکوری کا فیصلہ کیا ہے دوسری جانب کارڈیالوجی ہسپتال انتظامیہ بھی پارکنگ‘ کنٹین اور دیگر ٹھیکوں کی مد میں ایف بی آر کو کوئی ریکارڈ فراہم نہیں کررہی جبکہ کوئی ٹیکس بھی نہیں دیا جارہا آر ٹی او حکام جیسے ہی کوئی کارروائی کرتے ہیں تو اعلیٰ حکام کی طرف سے سفارشوں کے باعث کام رک جاتا ہے۔

رجسٹری برانچ

مزید : ملتان صفحہ آخر