ورلڈکپ میں نظر انداز کئے جانے پر وہاب ریاض مایوس

ورلڈکپ میں نظر انداز کئے جانے پر وہاب ریاض مایوس

کراچی (یواین پی)قومی فاسٹ بالر وہاب ریاض نے مسلسل شاندار کارکردگی کے باوجود ورلڈکپ کے ممکنہ کھلاڑیوں میں نام نہ آنے پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں معلوم نہیں ہے کہ کن وجوہات پر انہیں نظرانداز کیا جا رہا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ مسلسل کارکردگی کے باوجود ممکنہ ٹیم میں ان کا نام نہ آنا حیران کن ہے ، اس صورتحال پر وہ بہت پریشان ہیں اور ان کے پاس اب کھونے کو کچھ نہیں ہے کیونکہ جو کچھ تھا وہ سب لے لیا گیا ہے۔ وہاب ریاض نے امید کا دامن ہاتھ سے نہ چھوڑتے ہوئے کہا کہ آ پر یقین ہے کیونکہ میں نے سخت محنت کی تھی اور وہ رائیگاں نہیں جائے گی۔ یاد رہے کہ وہاب ریاض نے اپنا آخری ون ڈے انٹرنیشنل میچ دو سال قبل چیمپئنز ٹرافی میں کھیلا تھا جبکہ آخری ٹیسٹ بھی گزشتہ سال اکتوبر میں آسٹریلیا کے خلاف کھیلا۔33سالہ وہاب ریاض نے کہاکہ ہر کھلاڑی کا اچھی کارکردگی دکھانے کا مقصد پاکستان کی نمائندگی کرنا ہوتا ہے اور میری بھی یہی کوشش ہے کہ پاکستان کیلئے کھیلوں لیکن میں یہ سمجھنے سے قاصر ہوں کہ کن وجوہات کی بناء پر مجھے نظرانداز کیا جارہا ہے۔فاسٹ بالر نے مزید کہا کہ پاکستان کپ میں مشکلات کے باوجود سخت محنت کی۔

وہاں بالنگ کیلئے بہت جان لگانا پڑی۔ میں نے اپنا تجربہ بروئے کار لاتے ہوئے سخت محنت سے بہترین کارکردگی دکھانے کی کوشش کی لیکن اس کے باوجود ورلڈ کپ کے ممکنہ کھلاڑیوں میں میرا نام نہیں آیا۔

انہوں نے کہا کہ میری قسمت میں ہوگا تو میں ضرور پاکستان کیلئے کھیلوں گا۔یاد رہے کہ گزشتہ کچھ عرصے سے وہاب ریاض مستقل عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے بہترین فارم اور رفتار کے ساتھ بالنگ کر رہے ہیں۔حال ہی میں ختم ہونے والے پاکستان کپ میں بھی انہوں نے شاندار کھیل پیش کیا اور بیٹنگ کیلئے سازگار پچز پر عماد بٹ کے ہمراہ 10وکٹوں کے ساتھ سب سے کامیاب بالر رہے تاہم وہاب اس لحاظ سے ممتاز رہے کہ ان کا اسٹرائیک ریٹ اور اوسط دونوں عماد بٹ سے بہتر تھی۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی