عاشق کے ہاتھوں بے آبرومتاثرہ لڑکی انصاف کیلئے پولیس کے پاس پہنچ گئی

عاشق کے ہاتھوں بے آبرومتاثرہ لڑکی انصاف کیلئے پولیس کے پاس پہنچ گئی
عاشق کے ہاتھوں بے آبرومتاثرہ لڑکی انصاف کیلئے پولیس کے پاس پہنچ گئی

  

لاہور(کرائم رپورٹر)مسلم ٹائون کے علاقے میں عاشق کے ہاتھوں بے آبرو اور جسم فروشی کے لیے فروخت ہونے والی متاثر لڑکی انصاف کے لیے دربدر کی ٹھوکریں کھانے لگی۔متاثرہ لڑکی نے ایس ایس پی انوسٹی گیشن سے تفتیش تبدیلی کی درخواست کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق چند روز مسلم ٹائون کے علاقے میں شازیہ نامی خاتون کو اس کے عاشق نے بے آبرو کرنے کے بعد جسم فروشی کیلئے اوکاڑہ فروخت کر دیا تھا۔جہاں اس سے کئی روز تک بد اخلاقی کا گھنائونا کھیل کھیلا جاتا رہا بعد ازاں تھانہ مسلم ٹائون پولیس نے شازیہ کی درخواست پر مقدمہ درج کر کے تفتیش انویسٹی گیشن پولیس کے حوالے کر دیا۔

شازیہ کا کہنا ہے کہ انویسٹی گیشن پولیس نے نامزد 5 ملزمان کو گرفتار کر کے 3کو رہا کر دیا اور باقی ماندہ کو بھی باعزت طریقے سے بے گناہ کیے جانے کا خدشہ ہے جبکہ تفتیشی افسر فرضی کہانیاں سنا کر معاملے کو اور رنگ دے کر الجھانے کی کوشس کر رہا ہے۔ میری آئی جی پنجاب اور ایس ایس پی انویسٹی گیشن سے اپیل ہے کہ کسی ایماندار افسر سے و اقعہ کی شفاف انکوائری کروا کر انصاف کے تقاضے پورے کیے جائیں۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور