آئین وقانون پر کسی قسم کاسمجھوتہ  نہیں کیا جائے گا، ملک کی بدنامی کا باعث بننے والی تنظیموں کونشان عبرت بنا دیں گے: شہریار آفریدی

آئین وقانون پر کسی قسم کاسمجھوتہ  نہیں کیا جائے گا، ملک کی بدنامی کا باعث ...
آئین وقانون پر کسی قسم کاسمجھوتہ  نہیں کیا جائے گا، ملک کی بدنامی کا باعث بننے والی تنظیموں کونشان عبرت بنا دیں گے: شہریار آفریدی

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر مملکت  داخلہ شہریار آفریدی  نے کہا ہے کہ ملک کامثبت تشخص اجاگر کرنے کیلئے حکومت  نے  انقلابی اقدامات کیے ہیں ، آئین وقانون پر کسی قسم کاسمجھوتہ  نہیں کیا جائے گا، کسی کو قانون  ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں  دی جائے گی، نئے پاکستان  میں کسی سے  امتیازی  سلوک روا نہیں رکھا جائے گا، ملک کی بدنامی کا باعث بننے والی تنظیموں کونشان عبرت بنایا جائے گا۔

اسلام آباد میں نیوز کانفرنس  کرتے ہوئے شہریار آفریدی نے کہاکہ وزیراعظم کی ہدایت پر معاون خصوصی  زلفی بخاری  کے ہمراہ کوئٹہ  گیا ، مذاکرات کے بعد  ہزارہ کمیونٹی  نے دھرنا ختم کرنے پر اتفاق  کیا ، ہزارہ  برادری  کے ساتھ جو بھی زیادتیاں ہوئیں ان کا ازالہ کیا جائے گا ۔ وزیر مملکت داخلہ نے کہاکہ شہریوں کے جان و مال کی حفاظت کی ذمہ داری ریاست  کی ہے،نیشنل ایکشن پلان پر مکمل عمدرآمد  کیلئے پرعزم ہیں،نیشنل ایکشن پلان پر ماہرین پر مشتمل کمیٹی تشکیل  دی گئی ہے ۔ نیشنل ایکشن پلان  کے حوالے سے عملی اقدامات  یقینی بنائے جائیں  گے ،ایسے اقدامات  کیے جارہے ہیں کہ کسی  کوبھی قانون  ہاتھ میں لینے  کی جرأت نہیں ہوگی ،آئین و قانون پر کسی قسم کا سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔

شہریار آفریدی نے کہاکہ ملک کی بدنامی کا باعث بننے والی  تنظیموں  کو نشان عبرت بنایا جائے گا ،بلوچستان کے عوام میں حب الوطنی کا مثالی جذبہ پایا  جاتا ہے، نئے پاکستان میں کسی سے امتیاز  سلوک رواں نہیں رکھا جائے گا،ملک کے مثبت تشخص  کیلئے موجودہ حکومت نے  انقلابی اقدامات اٹھائے ہیں،خارجہ پالیسی میں اصلاحات کے ساتھ نئی پالیسی متعارف کرائی،ہمارے  لئے  ہر شہری قابل احترام ہے ان کوتحفظ کی فراہمی  ریاست کی ذمہ داری ہے،ماضی کی حکومتوں کی ناقص  پالیسیوں  کے باعث ملکی  اقدار تک کو دائو پر لگا دیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ  پاکستان میں سیاحت کوفروغ  دیا جائے گا، پاکستان کو اللہ تعالی نے  سب کچھ دے رکھا ہے ، صحرا، پہاڑ ، دریا ہیں چارموسم  ہیں اللہ نے ہمیںہر ایک نعمت سے نوازا ہے ، پاکستان میں جب ٹورازم بڑھ یگی پاکستان کی عزت  میں اضافہ ہوگا ، پاکستان کے موقف کو تقویت ملے گی، پاکستان کے دوست بڑھیں گے ، پاکستان میں مذہبی  ،سیاحت کلچر اقدار سب کچھ  ہے  ہم نے اپنے اخلاق اقدارکردار اور روایات سے دنیا  پرثابت کرنا ہے کہ ہم مہذب قوم ہیں ، ہم امن کے خواہش مند ہیں ، ہم نے قربانیاں دی ہیں ۔ 1979 سے مسلسل  جنگ میں ہیں ہمارے دشمنوں نے  ہمیں لڑانے  کا ہرحربہ  استعمال کیا  ہمیں تنہاکرنے کی کوشش کی گئی ۔

انہوں نے کہاکہ مہمانوں  کو عزت  دینا ہماری شرعی ذمہ داری ہے، نیشنل ایکشن پلان پر ماہرین پر مشتمل  کمیٹی تشکیل دی گئی ہے، جو بھی  ٹور پر آئے ہوئے مہمانوں  کے ساتھ بدسلوکی کریں گے تو قانون حرکت میں آئے گا ، نوجوان نسل کو پیغام ہے  کہ وہ غیر ملکی مہمانوں کو عزت دیں ،پاکستان ایک فیڈریشن  ہے وزارت داخلہ  کا کام تمام وفاقی  اکائیوں کے ساتھ مل کر پاکستان  کو پرامن بنانا ہے میڈیا کے سوالوں  کا جواب دیتے  ہوئے۔

مزید : قومی


loading...