ٹرانسپورٹرز کیلئے بھی معاشی پیکج کا اعلان کیا جائے:حافظ حسن زئی

  ٹرانسپورٹرز کیلئے بھی معاشی پیکج کا اعلان کیا جائے:حافظ حسن زئی

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)ٹیکسی،موٹر رکشہ،یلو کیب اونرز ازیسوسی ایشن کے صدر اور آل پاکستان بین الصوبائی بس اونرز ایسوسی ایشن کے سرپرست اعلیٰ حافظ الحق حسن زئی نے کہا ہے کہ لاک ڈاؤن میں توسیع غریب عوام کو زندہ درگور کرنے کے مترادف ہے۔ٹرانسپورٹرز کو پاکستانی تسلیم کرتے ہوئے ان کے لیے معاشی پیکج کا اعلان کیا جائے۔کہ دیگرشعبوں کی طرح رکشہ ٹیکسی ڈرائیور ز کو بھی صبح 9بجے سے شام 5بجے تک اپنی گاڑیاں سڑکوں پر لانے کی اجازت دی جائے۔وفاقی اور صوبائی حکومتیں امدادی رقوم کی تقسیم میں اپنے کارکنوں کو نوازنے کا سلسلہ بند کریں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے نثار احمد،عارف تنولی،شاہ روم بونیری،قاری عبدالرحمن،نصیب رزاق،،رشید عالم،محمد نذیر،شیر عالم،مدثر حسن اور سمیع اللہ پر مشتمل ٹرانسپورٹرز اور محنت کشوں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔حافظ الحق حسن زئی نے کہا کہ حکومت نے ایک مرتبہ پھر لاک ڈاؤن میں توسیع کرکے رکشہ اور ٹیکسی ڈرائیور ز کو مشکلات کا شکار کردیا ہے۔افسوسناک امر یہ ہے کہ دیگر شعبوں کو تو لاک ڈاؤن میں ریلیف دیا جارہا ہے لیکن شعبہ ٹرانسپوٹ کو بالکل نظرانداز کردیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس وقت پاکستان میں کورونا پر سیاست کی جارہی ہے۔سیاسی جماعتیں پوائنٹ اسکورنگ کے لیے ایک دوسرے پر الزامات لگارہی ہیں اور اس کے درمیان عوام پس رہے ہیں۔امدادی رقوم کی تقسیم میں اپنے کارکنوں کو نوازنے کا سلسلہ جاری رہا تو ملک افرا تفری کا شکار ہوسکتا ہے۔انہوں نے کہا کہاب تک فلاحی تنظیموں اور مخیر حضرات نے اپنے طور پر عوام کی مدد کی ہے اور حکومت کی امداد کا انتظار ناقابل برداشت ہوچکا ہے۔حکومت تیزی سے عملی اقدمات کرے۔حافظ الحق حسن زئی نے مطالبہ کیا کہ دیگرشعبوں کی طرح رکشہ ٹیکسی ڈرائیور ز کو بھی صبح 9بجے سے شام 5بجے تک اپنی گاڑیاں سڑکوں پر لانے کی اجازت دی جائے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -