معروف سوشل میڈیا گیم لڈو سٹار کے خلاف فتویٰ آگیا

معروف سوشل میڈیا گیم لڈو سٹار کے خلاف فتویٰ آگیا
معروف سوشل میڈیا گیم لڈو سٹار کے خلاف فتویٰ آگیا

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) لڈو سٹار نامی گیم نے مقبولیت کے نئے ریکارڈ قائم کیے ہیں اور آئے روز جیتنے والے کھلاڑیوں کے سکرین شاٹس ہم اپنے سوشل میڈیا اکاﺅنٹس کی والز پر دیکھتے ہیں تاہم اب اس گیم کے خلاف فتویٰ آ گیا ہے اور ایک مذہبی سکالر نے اسے حرام قرار دے دیا ہے۔ ویب سائٹ پڑھ لو کے مطابق یہ مذہبی سکالر یوتھ کلب کے چیف ایگزیکٹو آفیسر راجا ضیاءالحق ہیں جنہوں نے ایک ویڈیو اپنے فیس بک پیج پر پوسٹ کی ہے۔

اس ویڈیو میں راجا ضیاءالحق نے احادیث کے حوالے دیتے ہوئے ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ اسلام میں لڈو کھیلنا حرام ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ”اس نوع کی تمام گیمز کو علماءکرام حرام قرار دیتے ہیں یا پھر مکروہ۔ صحیح مسلم 2260، ابو داﺅد4939 اور ابن ماجہ 3763 وہ احادیث ہیں جن سے ثابت ہوتا ہے کہ لڈو حرام ہے۔ ان احادیث کا مفہوم ہے کہ ’رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا کہ ”جس شخص نے بھی کوڑیوں (پانسے کے کھیل میں استعمال ہونے والی سیپیاں)سے کھیلا، اس نے اپنے ہاتھ خنزیر کے گوشت اور خون میں بھگوئے۔“ویڈیو پیغام کے آخر میں وہ کہتے ہیں کہ ”ایسی گیمز پر وقت ضائع کرنا آخرت کی بربادی ہے کیونکہ ہمیں ایک روز واپس اللہ کی بارگاہ میں حاضر ہونا ہے اور اپنے دنیا میں گزارے ہوئے وقت کا حساب دینا ہے۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -