کوئی مسجد بند کی نہ ہی کر رہے ہیں ،رمضان المبارک میں تراویح ، اعتکاف اور نمازوں کے بارے ۔۔۔وفاقی وزیر داخلہ بریگیڈئیر (ر) اعجاز شاہ نے دو ٹوک اعلان کردیا

کوئی مسجد بند کی نہ ہی کر رہے ہیں ،رمضان المبارک میں تراویح ، اعتکاف اور ...
کوئی مسجد بند کی نہ ہی کر رہے ہیں ،رمضان المبارک میں تراویح ، اعتکاف اور نمازوں کے بارے ۔۔۔وفاقی وزیر داخلہ بریگیڈئیر (ر) اعجاز شاہ نے دو ٹوک اعلان کردیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر داخلہ بریگیڈئیر (ر) اعجاز شاہ نےکہا ہے کہ بیرون ممالک سے جو پاکستانی اور تبلیغی جماعت کے اراکین پاکستان واپس آنا چاہتے ہیں ،اُن کے لئے بندوبست کیا جا رہا ہے،حکومت نے نہ کوئی مسجد بند کی اور نہ ہی کر رہی ہے ،رمضان المبارک میں تراویح ، اعتکاف اور نمازوں کے بارے میں علماء کی مشاورت سے فیصلہ کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان علماء کونسل کے سربراہ علامہ حافظ طاہر محمود اشرفی سے  فون پر گفتگو کرتے ہوئےوفاقی وزیر داخلہ بریگیڈئیر (ر) اعجاز شاہ نے کہا کہ جو پاکستانی بیرون ممالک سے واپس پاکستان آنا چاہتے ہیں اُن کیلئے بندوبست کیا جا رہا ہے جبکہ  بیرون ممالک سے تبلیغی جماعت کے جو اراکین کو بھی وطن واپس لانے کا انتظام کیا جا رہا ہے ، اس مشکل مرحلہ میں ریاست کو ماں جیسا کردار ادا کرنا ہے ۔ انہوں نےکہا کہ حکومت نےنہ کوئی مسجد بند کی ہےاور نہ ہی کررہی ہے ،رمضان المبارک میں تراویح ، اعتکاف اور نمازوں کے بارے میں علماء کی مشاورت سے فیصلہ کریں گے ، حکومت علماء و مشائخ سے مشاورت کر رہی ہے اور چاہتے ہیں کہ کرونا سے محفوظ رمضان ہو ،فرائض بھی ادا ہوں اور کسی کو نقصان بھی نہ پہنچے۔انہوں نے کہا کہ حکومت علماء و مشائخ کا احترام کرتی ہے اور مساجد و مدارس ہمارے لیے محترم ہیں ۔

پاکستان علماء کونسل کے مرکزی چیئرمین حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے بریگیڈئیر (ر) اعجاز شاہ کی طرف سے تبلیغی جماعت ، زائرین اور مدارس ومساجد کے امور میں تعاون پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ علماء حکومت سے کسی صورت تصادم نہیں چاہتے ، لاک ڈاؤن توڑنے کی باتوں کا علماء کے اعلامیہ سے کوئی تعلق نہ ہے ، علماء نے حکومت کو مثبت تجاویز دی ہیں اور ہم امید کرتے ہیں کہ صدر مملکت سے ہونے والے اجلاس میں معاملات مکمل طور پر طے ہو جائیں گے۔

مزید :

قومی -