اہم عرب ملک نے کورونا ٹیسٹ کرانے کے لیے ریاست سے رجوع کرنے والے غیر ملکی مزدوروں کو گرفتار کرنا شروع کردیا

اہم عرب ملک نے کورونا ٹیسٹ کرانے کے لیے ریاست سے رجوع کرنے والے غیر ملکی ...
اہم عرب ملک نے کورونا ٹیسٹ کرانے کے لیے ریاست سے رجوع کرنے والے غیر ملکی مزدوروں کو گرفتار کرنا شروع کردیا

  

دوحہ(ڈیلی پاکستان آن لائن )انسانی حقوق کی عالمی تنظیم 'ایمنسٹی' کی طرف سے جاری ایک رپورٹ میں قطری حکومت کو کرونا کی وبا کے دنوں میں غیرملکی لیبر کےساتھ غیر منصفانہ سلوک پر کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ عالمی ادارے نے اپنی تازہ رپورٹ میں قطر پرغیرملکی کارکنوں کو گرفتار اور انہیں ملک بدر کرنے کا الزام عاید کیا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا کہ قطری حکومت ایسے تمام فراد کو جو کرونا کا ٹیسٹ کرانا چاہتے ہیں حراست میں لیتی اور انہیں ملک بدر کرنا چاہتی ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ملک میں کام کرنے والے سینکڑوں غیرملکی شہریوں کو صرف اس لیے گرفتار کیا گیا کہ وہ عالمی ادارہ صحت کی ہدایات کی روشنی میں اپنا طبی معائنہ اور کرونا کا ٹیسٹ کرانا چاہتے ہیں۔

ایمنسٹی نے قطر میں پولیس کے ہاتھوں گرفتار ہونے والے 20 افراد کے انٹرویو کیے جنہیں مارچ میں حراست میں لیا گیا۔ ان کی گرفتاری کی وجہ ان کی طرف سے کورونا وائرس کا معائنہ کرانے کا مطالبہ تھا۔گرفتاری کے بعد انہیں کسی قسم کی طبی سہولت مہیا نہیں کی گئی بلکہ انہیں حراستی مراکز میں رکھا گیا۔ حراستی مراکز میں بنیادی ضروریات سے بھی محروم رکھا گیا ۔

مزید :

عرب دنیا -کورونا وائرس -