”ویوین رچرڈز ریٹائرمنٹ کے بعد میرے ساتھ بیٹنگ کر رہے تھے، وہ میرے پاس آئے اور کہا کہ سب سے لمبا چھکا مارنے کا مقابلہ کرو گے؟“ انضمام الحق نے ایسا دلچسپ واقعہ سنا دیا کہ آپ بھی داد دئیے بغیر نہ رہ سکیں

”ویوین رچرڈز ریٹائرمنٹ کے بعد میرے ساتھ بیٹنگ کر رہے تھے، وہ میرے پاس آئے ...
”ویوین رچرڈز ریٹائرمنٹ کے بعد میرے ساتھ بیٹنگ کر رہے تھے، وہ میرے پاس آئے اور کہا کہ سب سے لمبا چھکا مارنے کا مقابلہ کرو گے؟“ انضمام الحق نے ایسا دلچسپ واقعہ سنا دیا کہ آپ بھی داد دئیے بغیر نہ رہ سکیں

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز سابق کپتان و چیف سلیکٹر انضمام الحق نے انتہائی دلچسپ واقعہ سنایا ہے کہ کس طرح ان کے اور ویوین رچرڈز کے درمیان یہ مقابلہ ہوا کہ کون لمبا چھکا مارے گا۔

تفصیلات کے مطابق انضمام الحق نے ایک ویڈیو میں اس دلچسپ واقعے سے متعلق بتایا کہ ”ایک مرتبہ میں لیجنڈری بلے باز سر ویوین رچرڈز کیساتھ بیٹنگ کر رہا تھا۔ وہ میرے پاس آئے اور کہا کہ چلو مقابلہ کرتے ہیں کہ کون لمبا چھکا مارے گا۔ میں مسکرایا اور کہا کہ یقینا۔ میں نے سوچا کہ وہ ریٹائرڈ ہو چکے ہیں جبکہ میں اس وقت جوان تھا اور اپنی بیٹنگ پر اعتماد بھی تھا۔“

انضمام الحق نے کہا کہ ”پہلے اوور میں انہوں نے چھکا لگایا جو گراﺅنڈ کے باہر موجود پارکنگ ایریا میں گرا۔ پھر میں نے ایک چھکا مارا، اور گیند ڈریسنگ روم کے اوپر سے ہوتا ہوا ویوین رچرڈز کے چھکے سے بھی دور جا گرا۔ میں نے خوش ہو کر انہیں کہا کہ میں نے آپ سے بڑا چھکا مارا ہے۔ انہوں نے صرف اتنا جواب دیا کہ ابھی ہم آﺅٹ نہیں ہوئے اور بیٹنگ کر رہے ہیں۔“

سابق چیف سلیکٹر نے کہا کہ ”تیسرے اوور میں ویوین رچرڈز نے چھکا مارا تو گیند ڈریسنگ روم کے اوپر سے ہوتی ہوئی گراﺅنڈ کے باہر موجود ایک گھر میں جا گرا۔ انہوں نے صرف ایک چھکا نہیں مارا بلکہ تین فلک شگاف چھکے لگائے اور تینوں مرتبہ ہی گیند قریبی گھروں میں گیا۔ وہ اس طرح کے کھلاڑی ہی تھے اور ریٹائرمنٹ کے بعد بھی اس لیول پر کھیلتے تھے۔ وہ بہت ہی شاندار کرکٹر تھے اور چونکہ وہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے مینٹور ہیں، اس لئے میرے خیال سے کھلاڑی ان سے بہت کچھ سیکھ رہے ہوں گے۔“

مزید :

کھیل -