وفاقی ترقیاتی پروگرام میں سندھ کو ہمیشہ نظر انداز کیا جاتا ہے: ناصر شاہ 

  وفاقی ترقیاتی پروگرام میں سندھ کو ہمیشہ نظر انداز کیا جاتا ہے: ناصر شاہ 

  

 کراچی (اسٹاف رپورٹر)صوبا ئی وزیر اطلا عا ت سید نا صر حسین شاہ نے کہا ہے کہ وفا قی تر قیا تی پرو گرا م میں سندھ کو ہمیشہ نظراندازکیاجاتاہے،وزیراعظم خود کہہ چکے ہیں کہ سندھ ہمارا صو بہ نہیں ہے اس سے ظاہرہوتا ہے کہ ان کے سندھ کے لئے کیاجذبات ہیں۔انہو ں نے کہا کہ وفا قی بجٹ پروگرام سے متعلق سندھ حکومت کواعتما د میں نہیں لیا جا تا،اکثرآن لائن اجلا س میں سندھ کی بیوروکریسی کوبلایا جاتا ہے،سیا سی قیا دت یا صوبائی وزراء کونہیں بتایا جاتا ہے۔صو با ئی وزیر اطلا عا ت سید نا صر حسین شاہ نے جمعرات کو پریس کا نفرنس کر تے ہو ئے کہا کہ سندھ کے عوا م کی ترقی اور بہتری کے پروگرام میں ہم تعاون کے لئے تیارہوتے ہیں لیکن وفا قی حکومت کی جا نب سے رابطہ نہیں کیا جاتا۔انہو ں نے کہا کہ وزیراعظم کے سندھ کے دورے سے متعلق ابتک آگاہ نہیں کیا گیا۔وفا قی حکومت کی جا نب سے سندھ کیلئے  تر قیا تی پیکج کو ہم ویلکم کرتے ہیں سندھ کے لو گو ں کی بہتری کیلئے لا ئے گئے پیکج کے سلسلے میں سندھ حکومت بھر پو ر تعا ون کریگی۔انہوں نے کہا کہ این ایف سی ایوا ر ڈ کا اعلا ن صرف صدر آصف زرداری کی حکومت میں ہوا اسکے بعد ن لیگ کی حکومت نے نئے این ایف سی ایوارڈ کا اعلا ن 2015میں کر نا تھا لیکن ابھی تک نئے این ایف سی کا اعلا ن نہیں کیا گیا  ۔ انہو ں نے کہا کہ سندھ حکو مت نے کرا چی میں تر قیا تی کا م کرا ئے ہیں نئے این ایف سی پر عملدرآمد ہو  جا ئے تو سندھ حکومت مزید ترقیا تی کا م کر نے کی پو زیشن میں آجا ئیگی۔انہو ں نے کہا کہ پیپلز پا ر ٹی اس وقت واحد جماعت ہے جومردم شماری پرتنہالڑرہی ہے جوبہت باتیں کرتے تھے انہوں نے کو ئی بات نہیں کی ایم کیوایم مر دم شما ر ی کے معا ملے پر خاموش رہی،پی ٹی آئی کو کرا چی سے سب سے زیادہ مینڈیٹ ملا انہوں نے بھی بات نہیں کی۔انہو ں نے کہا کہ سندھ کی آبا دی کم دکھائی گئی ہے،یونیسیکو کے مطا بق سندھ کی آبا دی 6 کروڑ سے زا ئد ہے مر دم شما ر ی کم دکھا نے سے این ایف سی میں حصے پر بہت بڑا فر ق پڑتا ہے  صوبائی وزیر اطلا عا ت سید نا صر حسین شاہ نے کہا کہ کل بھی وزیراعظم نے ذکرکیاکہ کراچی میں چالیس فیصد آبادی کچی آبادیوں میں رہتی ہے پروزیراعظم کے پاس کراچی والوں کے لئے صرف باتیں ہیں۔انہو ں نے کہا کہ خا تم النبین نبی کریم ﷺ پر ہماری جانیں بھی قربان ہیں، اس معا ملے پر سندھ حکو مت کا مو قف وا ضح ہے۔مظاہرین کا طریقہ درست نہیں ہے،اس طرح کا طریقہ کار قابل قبول نہیں۔ وزیراعلیٰ سندھ کی ہدایت پرمیں نے ان سے خود بات کی کہ سڑک کے ایک طرف پرامن مظاہرہ کریں۔انہو ں نے کہا کہ یہ وفا قی حکومت کی بھی نا اہلی ہے کہ انہوں نے ان کے ساتھ معا ہد ہ کیا۔اس کے با وجو د وفا قی حکومت کی ذمہ دا ر ی تھی کہ ان کے ساتھ بیٹھ کر معا ملا ت کو بہتر طریقے سے حل کر تی۔ پی ڈی ایم سے متعلق سوال پر انہو ں نے کہا کہ میں ایک سیاسی ورکرہوں پرامید ہوں کہ ہم سب ایک ہوجائیں گے ہم سب ایک پارٹی نہیں ہیں۔تما م جما عتو ں کا الگ الگ منشو ر ہے لیکن ہم ایک ایجنڈے پر اکھٹے ہو ئے تھے۔انہو ں نے کہا کہ وفاقی حکومت نااہل ہے ان کی کوئی تیاری نہیں تھی انہو ں نے لو گو ں کو ما مو ں بنا یا اور پوری معیشت کابیڑا غرق کردیا ہے۔انہو ں نے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں کو متحد ہونا چاہئے تا کہ اس نا اہل حکومت سے عوام کونجا ت دلا ئی جا سکے اگر ان کو گھر نہیں بھیجا گیا تو معیشت کا اور برا حا ل ہو جا ئے گا جس کو کو ئی بھی سنبھال نہیں پا ئے گا۔انہو ں نے کہا کہ پا کستا ن پیپلز پا ر ٹی اپوزیشن کا کردار نبھاتی  رہے گی۔مولانافضل الرحمن کے کچھ بیانات پر شدید اعتراض ہے،ن لیگ پہلے دن سے سولو فلائٹ چاہتی تھی،جب مولانا فضل الرحمن بات کررہے تھے تو پیپلزپارٹی کو واٹس ایپ گروپ سے نکال دیاگیا۔انہو ں نے کہا کہ پیپلزپارٹی کی فراخدلی تھی کہ پی ڈی ایم کے عہدے دوسری جماعتوں کو دیئے۔انہو ں نے کہا کہ ہم کسی کی ذیلی تنظیم نہیں ہیں، اگر کسی کوصدر آصف علی زر دا ر ی سے با ت کر نی ہے تو مو لا نا فضل الرحمان کے ذر یعے کر ے،مریم نواز اپنی پارٹی کی نائب صدر ہیں بات کرنی ہے تو شہباز شریف یا نوازشریف کریں۔صوبا ئی وزیر نے کہا کہ پیپلز پا ر ٹی کا فیصلہ اب اے این پی کے فیصلو ں سے مشرو ط ہے۔انہو ں نے کہا کہ کرا چی میں پا نی کا مسئلہ ہے ہما ر ی کو شش ہے کہ پا نی کی منصفا نہ تقسیم  ہوجہا ں پر لا ئینو ں کا نیٹ ورک نہیں وہا ں مجبو راََ ٹینکر کے ذر یعے پا نی دینا پڑ تا ہے۔صوبا ئی وزیر نے کہا کہ اس وقت کرا چی میں 6سے 7واٹر ہا ئیڈرینٹ چل رہے ہیں۔ایک سوال کے جوا ب میں انہو ں نے کہا کہ کرا چی میں سیف سٹی کا پرو جیکٹ کا فی عر صے سے تعطل کا شکا ر تھا چا ر سال قبل پرو جیکٹ پر کا م کا آغا ز ہو رہا تھا تو نیب کا لیٹر آگیا۔انہو ں نے کہا کہ اب معا ملا ت حل ہو چکے ہیں جلد کراچی سیف سٹی پرو جیکٹ پر کا م کا آغا ز ہو گا۔ایک سوا ل کے جوا ب میں انہو ں نے کہا کہ کا رو نجھر بہت اہم ہے وزیراعلیٰ سندھ نے اس معا ملے پر سندھ کا بینہ کی کمیٹی تشکیل دی ہے کمیٹی اپنی سفا ر شات پیش کریگی انہو ں نے کہا کہ اس معاملہ پر فیصلہ سندھ اور عوام کے مفا د میں کیا جا ئے گا۔

مزید :

صفحہ اول -