صدر مملکت اور سعودی وزیر خارجہ کا اقتصادی تعاون کو مزید فروغ دینے کا عزم

صدر مملکت اور سعودی وزیر خارجہ کا اقتصادی تعاون کو مزید فروغ دینے کا عزم
صدر مملکت اور سعودی وزیر خارجہ کا اقتصادی تعاون کو مزید فروغ دینے کا عزم

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) صدر مملکت آصف علی زرداری سے سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے ملاقات کی جس میں اقتصادی تعاون کو مزید فروغ دینے کے عزم کا اعادہ کیا گیا۔ 
نجی ٹی وی چینل دنیا نیوز کے مطابق ایوان صدر اسلام آباد میں سعودی وزیر خارجہ نے وفد کے ہمراہ صدر مملکت آصف علی زرداری سے ملاقات کی جس میں دو طرفہ تعلقات کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا گیا۔ملاقات میں سعودی وزراء برائے پانی و زراعت، صنعت ومعدنی وسائل، سرمایہ کاری، سعودی خصوصی کمیٹی کے سربراہ اور وزارت توانائی، سعودی پبلک انویسٹمنٹ فنڈ کے اعلیٰ حکام بھی موجود تھے۔پاکستانی وفد میں پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری، وزیر خارجہ اسحاق ڈار، وزیر نجکاری عبدالعلیم خان، وزیر پٹرولیم اور آبی وسائل مصدق ملک، وزیر صنعت و پیداوار رانا تنویرحسین اور اعلیٰ سرکاری حکام بھی شامل تھے۔

ملاقات کے دوران پاکستان اور سعودی عرب نے مضبوط شراکت داری اور اقتصادی تعاون کو مزید فروغ دینے کے عزم کا اعادہ کیا۔اس موقع پر صدر مملکت کا کہنا تھا کہ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان دیرینہ اور دہائیوں پرانے تعلقات ہیں، پاکستان سعودی عرب کے ساتھ کھڑا ہے۔آصف علی زرداری نے مزید کہا کہ اسلامی دنیا کی خوشحالی سعودی عرب کی ترقی سے وابستہ ہے، سعودی عرب پاکستان کے ساتھ تعلقات کو انتہائی اہمیت دیتا ہے۔

صدر مملکت نے خادمین حرمین شریفین کیلئے نیک خواہشات  کا بھی اظہار کیا۔

اس موقع پر فریقین نے علاقائی صورتحال، مشرق وسطیٰ میں حالیہ پیشرفت پر بھی تبادلہ خیال کیا، دونوں ممالک نے فوری اور غیر مشروط جنگ بندی اور غزہ میں اسرائیلی مظالم بند کرنے پر زور دیا۔سعودی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ سعودی عرب پاکستان کے ساتھ مضبوط شراکت داری قائم کرنے کیلئے پر عزم ہے۔

اس موقع پر سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے سعودی عرب کی ترقی میں پاکستانی تارکین وطن کے کردار کو بھی سراہا۔

یاد رہے کہ قبل ازیں سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان آل سعود نے وزیراعظم شہباز شریف سے وفود کی سطح پر ملاقات کی جس میں دوطرفہ تعلقات سمیت پاکستان میں سعودی سرمایہ کاری پر بھی بات چیت کی گئی۔