استادنصرت فتح علی خان کو دنیا سے رخصت ہوئے 17برس بیت گئے

استادنصرت فتح علی خان کو دنیا سے رخصت ہوئے 17برس بیت گئے
استادنصرت فتح علی خان کو دنیا سے رخصت ہوئے 17برس بیت گئے
کیپشن:   1

  

جہانیاں(آن لائن) پاکستان کے عظیم گلوکاراستادنصرت فتح علی خان کو اس دنیا سے رخصت ہوئے 17برس بیت گئے ہیں ۔نصرت فتح علی خان13اکتوبر 1948ءکو فیصل آباد میں پیدا ہوئے آپ کے والد استاد فتح علی خان اور چچا استاد مبارک علی خان اپنے دور کے مشہور قوال تھے۔نصرت فتح علی خان نے بھی بطور قوال دم مست قلند مست مست سے ملک گیر شہرت حاصل کی انہوں نے قوالی کی صنف میں مغربی انداز متعارف کروایا جسے دنیا بھر میں بھرپور پزیرائی حاصل ہوئی ان کی گائی ہوئی قوالی ” علی مولا علی مولا “ سے انہیں بے پناہ شہرت حاصل ہوئی ان کے گائے گیت ” سن چرخے دی مٹی مٹھی کوک “ نے انہیں شہرت کی بلندیوں تک پہنچا دیا انہیں شہرت میں عروج اس وقت حاصل ہوا امریکہ کے معروف موسیقات پیٹر گبریل کی موسیقی میں گائی گئی ان کی قوالی ” دم مست قلندر مست مست “ ریلیز ہوئی ۔نصرت فتح علی خان برصغر پاک و ہند سمیت دنیا بھر میں مقبول تھے 16اگست 1997ءکو ان کا انتقال ہو گیاان کی وفات سے گلوکاری کے میدان میں پیدا ہونے والا خلا ءمدتوں پورا نہ ہو سکے گا ۔

مزید :

کلچر -