اپنے آپ سے شرمناک کھیل کھیلنے والا تین دن تک قابل اعتراض حالت میں پھنسا رہا

اپنے آپ سے شرمناک کھیل کھیلنے والا تین دن تک قابل اعتراض حالت میں پھنسا رہا
اپنے آپ سے شرمناک کھیل کھیلنے والا تین دن تک قابل اعتراض حالت میں پھنسا رہا

  

برلن (نیوز ڈیسک) جرمنی کے شہر میونج میں ایک معمر شخص نے اپنا اکیلا پن دور کرنے کیلئے رنگ رلیاں منانے کا فیصلہ کیا لیکن بیچارہ شرمناک مصیبت میں پھنس گیا۔ ستاون سالہ شخص کے ہمسائے نے اسے تین دن سے غائب پاکر پولیس کو اطلاع کردی۔ جب پولیس نے شہر کے پوش علاقے میں واقع اس کے گھر کی بیل بجائی تو کوئی جواب موصول نہ ہوا جبکہ گھر کے دروازے پر تین دن کے اخبارات پڑے تھے جنہیں اٹھایا نہیں گیا تھا۔ پولیس نے گھر میں گھس کر دیکھا تو معمر شخص انتہائی عجیب و غریب حالت میں نیم بے ہوش پایا گیا۔ اس نے صرف ایک رنگدار زنانہ انڈرویئر پہن رکھا تھا اور ہاتھوں میں بھی جنسی اٹکھیلیوں کیلئے استعمال ہونے والی ہتھکڑیاں پہن رکھی تھیں اور چابی کھو جانے کے باعث بیچارہ قید ہوکر رہ گیا تھا۔ پولیس نے اس کے گھر کی تلاشی کے دوران چابی ڈھونڈ کر اس کے ہاتھوں کو آزاد کیا اور اس کی حالت غیر کے پیش نظر اسے فوراً ہسپتال پہنچایا۔ معمر شخص نے شرمندگی اور پشیمانی کا اظہار کرتے ہوئے اعتراف کرلیا کہ وہ زنانہ انڈرویئر پہن کر اور ہتھکڑیاں لگا کر جنسی اٹکھیلیاں کررہا تھا کہ چابی کھوبیٹھا اور تین دن تک گھر میں قید رہنے کی وجہ سے تقریباً بے ہوش ہوگیا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -