بھارتی وزیر اعظم کی جشن آزادی پر خواتین سے بداخلاقی کیخلاف تقریر

بھارتی وزیر اعظم کی جشن آزادی پر خواتین سے بداخلاقی کیخلاف تقریر

  

نیودہلی (نیوز ڈیسک) بھارت میں خواتین کے ریپ کا جرم اس قدر خوفناک حد کو پہنچ گیا ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی کو اپنی یوم آزادی کی پہلی تقریر میں اس پر اظہار شرمندگی کرنا پڑگیا۔ ہزاروں سیکیورٹی اہلکاروں سے اٹے ہوئے بھارتی دارالحکومت کے تاریخی لال قلعے میں ایک عظیم الشان تقریب برپا کی گئی لیکن اس میں سب سے توجہ طلب بات بھارت میں عورتوں کے ریپ کا شرمناک طوفان ہی رہی۔ وزیراعظم نے والدین پر زور دیا کہ وہ اپنے بیٹوں کو غلط اور صحیح کی تمیز سکھائیں اور ان پر زور دیا ہے کہ وہ اپنے بیٹوں کے سیاہ کرتوتوں کی ذمہ داری لیں۔ انہوں نے بھارت میں بیٹیوں کو پیدا ہونے سے پہلے قتل کئے جانے کی روایت کی بھی مخالفت کی اور ڈاکٹروں پر زور دیا کہ وہ بچیوں کو پیدائش سے پہلے مارنے کیلئے کروائی جانے والی ابارشن کا حصہ نہ بنیں۔ مودی نے ہر بھارتی سکول میں بیت الخلاءتعمیر کروانے کا بھی وعدہ کیا۔بھارتی حکومت پہلے بھی اس سلسلہ میں سخت کوششیں کرچکی ہے اور متعدد علاقوں میں لوگوں کے لئے مفت بیت الخلاءتعمیر کروائے گئے ہیں لیکن لوگوں نے انہیں استعمال کرنے سے انکار کردیا ہے اور بدستور جھاڑیوں اور کھیتوں میں رفع حاجت کرنے پر بضد ہیں۔

خفت کا سامنا

مزید :

صفحہ آخر -