نواز شریف کے استعفیٰ تک دھرنا جاری رہے گا: عمران خان ، آج تین بجے دوبارہ بیٹھیں گے،تمام قوم کو دھرنے میں شرکت کی دعوت

نواز شریف کے استعفیٰ تک دھرنا جاری رہے گا: عمران خان ، آج تین بجے دوبارہ ...
نواز شریف کے استعفیٰ تک دھرنا جاری رہے گا: عمران خان ، آج تین بجے دوبارہ بیٹھیں گے،تمام قوم کو دھرنے میں شرکت کی دعوت

  

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)عمران خان نے اپنے فجر کے وقت کیے گئے خطاب میں وزیرا عظم میاں نواز شریف سے ایک بار پھر استعفیٰ کا مطالبہ دہرا دیا ہے۔ انہوں نے اپنے خطاب میں تمام پاکستانی قوم کو دھرنے میں شرکت کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ وہ حکومت کے خاتمہ تک نہیں اٹھیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ 40گھنٹے سے نہیں سوئے اور مزید 40گھنٹے تک جاگ سکتے ہیں۔شرکاءآج سہ پہر تین بجے دوبارہ آئیں گے اور نواز شریف کے استعفیٰ تک بیٹھیں گے۔

عمران خان جب آدھی رات کو آب پارہ چوک پہنچے تواس وقت بارش شدید تھی اور یہ خیال کیا جا رہا تھا کہ وہ صبح کے وقت دھرنے سے خطاب کریں گے لیکن ایک دم سٹیج تیار کیا گیا اور پاکستان تحریک انصاف کے سرکردہ رہنما آکر سٹیج پر بیٹھنا شروع ہوگئے۔اس دوران عمران خان بھی عوام میں سے ہوتے ہوئے اور شرکاءسے ہاتھ ملاتے ہوئے سٹیج پر آگئے۔

اپنے خطاب میں انہوں نے کہا کہ زندگی میں کبھی سوچا نہیں تھا کہ فجر کہ وقت تقریر کر رہا ہو ں گا ،یہ لوگ بات کرتے ہیں کہ جمہوریت ڈی ریل نہ ہوجائے لیکن میں ان سے پوچھتا ہوں کہ ملک میں جمہوریت ہوگی تو وہ ڈی ریل ہوگی۔انہوں نے کہا کہ پولیس والے ان کے پاس آئے اور ایک خط پکڑایا جس میں لکھا تھا آپ کی جان کو ’پنجابی طالبان ‘ سے خطرہ ہے ۔جب انہوں نے ’پنجابی طالبان ‘ کے الفاظ کہے تو سارا مجمع قہقوں سے گونج اٹھا۔عمران خان نے کہا کہ پاکستان میں حقیقی آزادی کےلئے وہ اپنی جا ن بھی دینے کے لیے تیار ہیں، تحریک انصاف ہی نیا پاکستان بنا سکتی ہے ملک کو حقیقی آزادی دلائے بغیر یہاں سے نہیں اٹھوں گا۔انہوں نے کہا کہ خو ف انسان کو بزدل بنادیتا ہے اس لیے ڈرنا چھوڑ دیں ۔انہوں نے کہا کہ دھاندلی کے لیے جعلی بیلٹ پیپر چھپوائے گئے ،اپنے حق کے لیے ہر جگہ گئے لیکن انصاف نہیں ملا،  ملک میں کو ئی شریف انسا ن الیکشن نہیں لڑ سکتا ،دھاندلی کے الیکشن کسی صورت قبول نہیں کریں گے۔انہوں نے تما م پاکستانی عوام کو دھرنے میں شامل ہونے کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ میرا ایک ہی مطالبہ ہے نواز شریف مستعفی ہوں ۔انہوں نے کہا شرکاءکو کہا کہ آج سہ پہر تین بجے پھر آئیں گے اور باقاعدہ دھرنے کا آغاز ہوگا۔

قبل ازیں اللہ کے نام سے جب تہجد کے وقت جلسے کا آغاز ہوا تو عطا اللہ عیسیٰ خیلوی نے ’عمران خان اور نئے پاکستان ‘کے لئے گانا گایا۔ اس کے بعد شیخ رشید نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اپنی زندگی میں اتنا بڑا عوام کا سمندر نہیں دیکھا، عوام کے دلوں میں جو محبت ہے کبھی نہیں دیکھی۔انہوں نے کہا کہ حکمرانوں نے لوڈشیڈنگ اوربے روزگاری سے نجات کا وعدہ پورا نہیں کیا ، عوام کا سمندر ظالم نظام کو بہا لے جائے گا ۔ اس دوران شیخ رشید نے’ الوداع الوادع نواز شہباز الوداع الوداع ‘کے نعرے بھی لگوائے ۔ انہوں نے کہا کہ لو گ عمران خان سے اس لیے محبت کرتے ہیں کیوں کہ انہیں علم ہے کہ ان کے بچوں کو روز گار ملے گا۔

خیبر پختون خواہ کے وزیر اعلیٰ پر ویز خٹک نے اپنے خطاب میں آزادی مارچ کے شرکاءکے جوش وجنون کو سلام کیا اور کہا کہ جب تک یہ دھاندلی والی حکومت ختم نہیں ہو گی ہم یہاں سے جانے والے نہیں ہیں،چوروں اور لٹیروں کو پاکستا ن سے صر ف عمران خا ن ہی بھگائیں گے ، پختون قوم پورے ملک میں عمران خان کو سپورٹ کریگی ۔ انہوں نے کہا کہ جمہوریت کوپی ٹی آئی نے نہیں بلکہ موجودہ حکومت نے ڈی ریل کیا ،ملک کو عمران خان کی ضرورت ہے ،نیا پاکستان عمران خان ہی بنا سکتے ہیں ۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ملک کے ساتھ بہت مذاق ہو گیا ،ملک کو لوٹا گیا۔وزیر اعظم کو للکارتے ہوئے انہوں نے کہا ’نواز شریف یہ ملک تمھاری جا گیر نہیں ہے‘ ۔ انہوں نے کہا کہ خیبر پختون خواہ نے کرپشن ختم کی اور پولیس کو غیر سیاسی بنایا ،ملک سے چوروں اور لٹیروں کو صر ف عمران خان ہی نکال سکتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ شیر کے مقابلے میں شکاری آ گیا اور اب ہم اسلام آباد سے خالی ہاتھ نہیں جائیں گے ۔

شاہ محمود نے جلسے سے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ کچھ لوگوں نے عمران خان کے قافلے پرقاتلانہ حملے کروایا ہم پر پتھراﺅبھی کیا گیا،اس حملے میں ن لیگ کے کارکنا ن شامل ہیں، قافلے پر حملہ کارکنا ن کو مشتعل کرنے کے لیے کیا، گلو بٹ لاہور کا تھا ،گوجرانوالہ کا پومی بٹ نکل آیا۔انہوںنے کہا کہ ہم نئے پاکستان کے آغاز کے لیے آئے ہیں ، منزل کے حصول تک سفر جاری رکھیں گے، لاہور میں جوان اور بوڑھے ایک نیا عزم لے کر سڑکوں پر آئے، منزل کے حصول تک سفر جاری رکھیں گے۔انہوں نے کہا کہ حکمرا ن سوچتے ہیں کہ ہماری صفوں میں انتشار پھیلائیں گے لیکن ایسا نہیں ہوگا۔

مزید :

قومی -Headlines -Breaking News -