گوجرانوالہ میں پی ٹی آئی کے کارکنوں نے پہلے پتھراﺅ کیا ، سعد رفیق

گوجرانوالہ میں پی ٹی آئی کے کارکنوں نے پہلے پتھراﺅ کیا ، سعد رفیق

  

لاہور( جنرل رپورٹر)جماعت اسلامی کے مرکزی سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے گوجرانوالہ میں تحریک انصاف کے آزادی مارچ اور عمران خان کے کنٹینر پر پتھراﺅ اور دونوں جماعتوں کے کارکنان کے درمیان کشیدگی کی تشویش صورتحال پر فوری طور پر تحریک انصاف کے مرکزی قائدین ‘گورنر پنجاب چو دھر ی محمد سرور اور وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق سے رابطہ کیا اور ان سے اس واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے کہاکہ پرامن احتجاج کو پرتشدد نہ بنایا جائے حکومت کسی اشتعال کے جواب میں اشتعال کا رویہ اختیار کرے گی تو یہ اس سے بڑی تباہی ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ حکومتی جماعت اور آزادی مارچ کے شرکاءکو ایک دوسرے کے حق کا لحاظ رکھنا چاہیے آزادی مارچ کے شرکاءپرامن ہیں حکومتی جماعت کے کارکنان از خود صورتحال خراب نہ کریں جس پر خواجہ سعد رفیق نے انہیں کہاکہ گوجرانوالہ میں مسلم لیگ (ن)کے دفتر پر پتھراﺅ کیا گیا اور وزیراعظم نوازشریف کی تصاویر پھاڑی گئیں اسی لیے کارکنان میں ردعمل پیدا ہو ا لیکن مسلم لیگ (ن)کی جی ٹی روڈ پر قائم تمام دفاتر اور تنظیموں کو ہدایت کر دی ہے کہ وہ دفاتر میں نہ رہیں اور آزادی مارچ کے شرکا سے بھی اپیل ہے کہ وہ پرامن رہیں حکومت نے آزادی مارچ والوں کے سیاسی اور جمہوری حق کو تسلیم کیا ہے انہیں بھی پرامن رہنا چاہیے ۔ اس موقع پر لیاقت بلوچ نے سپریم کورٹ کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے توقع ظاہر کی ہے کہ حکومت اور قومی و آئینی ادارے اس فیصلے کا احترام کریں گے اور کوئی ایسا قدم نہیں اٹھائیں گے جو غیر آئینی ہو ۔

مزید :

صفحہ اول -