عمران خان پارلیمنٹ میں آکر بات کریں ، سننے کو تیار ہیں ، وزیراعظم کا استعفیٰ ’چاکلیٹ‘ نہیں : مسلم لیگ ن

عمران خان پارلیمنٹ میں آکر بات کریں ، سننے کو تیار ہیں ، وزیراعظم کا استعفیٰ ...
عمران خان پارلیمنٹ میں آکر بات کریں ، سننے کو تیار ہیں ، وزیراعظم کا استعفیٰ ’چاکلیٹ‘ نہیں : مسلم لیگ ن

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) حکمران جماعت مسلم لیگ ن نے کہاہے کہ عمران خان نے ایک مرتبہ پھر غیرآئینی مطالبہ دوہرایاہے ،کوئی نئی بات نہیں کی ، پارلیمنٹ میں آکر بات کریں تو آئینی مطالبات پورے کرنے ، بات سننے کو تیارہیں ۔ رہنماﺅں کاکہناتھاکہ عمران خان مبینہ دھاندلیوں کیخلاف آزادی مارچ کررہے ہیں ، اگر دھاندلی ہوئی ہے تو وزیراعلیٰ سے استعفیٰ لے کر خیبرپختونخواہ اسمبلی تحلیل کریں اور دوبارہ صاف شفاف الیکشن کرائیں ۔

عمران خان کے آزادی مارچ کے شرکاءسے خطاب پر اپنے ردعمل میں سابق صوبائی وزیرقانون رانا ثناءاللہ کاکہناتھاکہ عمران خان نے عوام کیساتھ زیادتی کی ، لوگوں کو سڑکوں پر لاکر خود خواب خرگوش کے مزے لے رہے ہیں ، وزیراعظم کے استعفے کا مطالبہ غیرآئینی ہے ،مذاکرات کریں ، آئینی مطالبات پورے کرنے کو تیار ہیں لیکن بڑے جلسے کرنے سے کوئی وزیراعظم نہیں بن جاتا، ویسے توطاہرالقادری کا جلسہ عمران سے بڑا تھا، مسلم لیگ ن کو 10دن کا وقت دیں ، اِن سے بڑا جلسہ کرکے دکھائیں گے ۔ اُنہوں نے کہاکہ عمران خان دھاندلیوں کیخلاف مارچ کررہے ہیں ، دھاندلی ہوئی تھی تو کے پی کے اسمبلی تحلیل کردیں ، وہاں دوبارہ الیکشن کرادیں ۔

سینیٹر مشاہداللہ خان کاکہناتھاکہ عمران نے سیاسی تاریخ کی سب سے بڑی غلطی کی اور اب الزامات کی سیاست کررہے ہیں ، جس مارچ کا آغاز ہی خراب ہو، انجام کیا ہوناہے ، مارچ کے نام پر بہت پیسہ ضائع کیا۔اُنہوں نے کہاکہ عمران خان نے کارکنان کو دھوکہ دیا لیکن عوام نے اُن کے مطالبات کو مستردکردیا، اربوں روپے کا نقصان ہوا، تماشہ فیل ہوگیا۔ اُن کاکہناتھاکہ ’انوکھا لاڈلہ کھیلنے کو مانگے چاند‘ وزیراعظم کا استعفیٰ چاکلیٹ نہیں کہ مانگنے پر فوری دے دیں ، یہ ملک کسی ضدی شخص کی خواہش پر نہیں چلے گا۔

وفاقی وزیرریلوے خواجہ سعد رفیق کاکہناتھاکہ جلسے کرکے مطالبات نہیں منوائے جاسکتے ، عمران خان دھاندلی اور دھونس کی بات کرتے ہیں ، پارلیمنٹ میں آکر بات کریں ، ضرور سنیں گے ۔

مزید :

لاہور -اہم خبریں -