انقلاب مارچ سے پکڑا گیامسلح شخص پولیس اہلکار نکلا

انقلاب مارچ سے پکڑا گیامسلح شخص پولیس اہلکار نکلا
 انقلاب مارچ سے پکڑا گیامسلح شخص پولیس اہلکار نکلا

  

اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان عوامی تحریک کے قائد طاہر القادری کی تقریر کے دوران اسلحہ کے ساتھ پیش کیے جانے والاشخص، وفاقی دارلحکومت کی پولیس کا اہلکار نکلا۔ وفاقی دارلحکومت کی پولیس کے مطابق مسلح شخص پولیس اہلکار ہے جوکہ جلسہ گاہ میں ڈیوٹی پر موجود تھااور دھرنے کی شرکاءاس کو پکڑ کر اسٹیج پر طاہر القادری کے پاس لے گئے۔ مذکورہ اہلکار کا نام عدیل قریشی بتایا گیا ہے۔

اس سے قبل آج جب علامہ طاہر القادری دھرنے کے شرکاءسے خطاب کر رہے تھے توکارکنوں کی جانب سے ایک مسلح شخص کو پکڑ کر اسٹیج پر ان کے سامنے پیش کیا گیا تھا تو طاہر القادری نے اسے ن لیگ کی سازش قرار دیتے ہوئے اس کواسلام آباد کا ’گلو بٹ‘ قرار دیا تھا اور اس کو معاف کرتے ہوئے نا صرف گلے لگایا تھا بلکہ امن کے موضوع پر ’سیر حاصل‘لیکچر دیتے ہوئے کارکنوں کو ہدایات جاری کی تھیں کہ اس کو جلسہ گاہ سے باہر جانے دیں۔اس موقع پر جب مذکورہ شخص نے کچھ کہنے کی کوشش کی تو طاہر القادری نے اس کی ایک نہ سنی اور اسے ’گلوبٹ‘کہہ کر پکارتے رہے ۔

مزید :

قومی -