یوم آزادی کے موقع پر 28ارب روپے سے زائد کی اضافی اقتصادی سرگرمیاں ہوئیں

یوم آزادی کے موقع پر 28ارب روپے سے زائد کی اضافی اقتصادی سرگرمیاں ہوئیں

کراچی (اکنامک رپورٹر) ملک میں یوم آزادی کے موقع پر مجموعی طور پر 28 ارب روپے سے زائد کی اضافی اقتصادی سرگرمیاں ہوئی ہیں جس سے فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر)کو بھاری ریونیو حاصل ہوگا۔ادھرکراچی میں بھی 14اگست کو تجارتی سرگرمیوں کا 40 سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیا۔اس ضمن میں ذرائع نے بتایا کہ ملک کے یوم آزادی کے موقع پر گزشتہ ایک ماہ کے دوران اقتصادی سرگرمیوں میں خاطر خواہ اضافہ ہوا ہے جبکہ گزشتہ ہفتے کے دوران سب سے زیادہ اقتصادی سرگرمیاں ہوئی ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ان اقتصادی سرگرمیوں سے ایف بی آرکو ڈائریکٹ اور ان ڈائریکٹ ٹیکسوں کی مد میں بھاری ریونیو حاصل ہوگا کیونکہ جتنی بھی خریدو فروخت ہوئی ہے وہ قابل ٹیکس ہے، اسی طرح یوم آزادی کے موقع پر گزشتہ 3 روز کے دوران پٹرولیم مصنوعات کی فروخت میں بھی بے تحاشہ اضافہ ہوا ہے اور اس مد میں بھی ایف بی آر کو خاطر خواہ سیلز ٹیکس ملے گا جبکہ یوم آزادی کے موقع پر تفریحی مقامات پر بھی بے پناہ رش رہا ہے اور ہوٹل و ریسٹورنٹس کا کاروبار بھی عروج پر رہا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ یوم آزادی کے موقع پر ہونے والی اضافی اقتصادی سرگرمیوں کے ریونیو پر اثرات آئندہ چند روز میں سامنے آئیں گے۔

ادھرکراچی میں بھی 14اگست پر اس سال تجارتی سرگرمیوں کا چالیس سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیا ہے۔ آل کراچی تاجر اتحاد کے مطابق کراچی والوں نے یوم آزادی کے لیے پانچ ارب روپے کی خریداری

مزید : کامرس