پاکستان اور افغانستان کے درمیان مذاکرات ہمارے لئے حوصلہ افزا ہیں ، امریکہ

پاکستان اور افغانستان کے درمیان مذاکرات ہمارے لئے حوصلہ افزا ہیں ، امریکہ

 واشنگٹن (اظہر زمان، بیوروچیف) پاکستان اور افغانستان کے درمیان مکالمے کی جو خبریں آرہی ہیں وہ ہمارے لئے حوصلہ افزا اور پرامید ہیں جن کا ہم خیرمقدم کرتے ہیں۔ امریکی وزارت خارجہ کے ترجمان جان کربی نے معمول کی پریس بریفنگ کے دوران یہاں ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے یہ تبصرہ کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ امریکہ کے خیال میں طالبان کے ساتھ پاکستان کی مدد سے ہونے والے افغان حکومت کے مذاکرات میں پیش رفت ہوئی ہے اور ہم ان مذاکرات کو جاری رکھنے کے حامی ہیں۔ ایک اور سوال کرنے والے نے پاکستان کے خلاف بیان حاصل کرنے کے نقطہ نظر سے پوچھا کہ پاکستان میں اسی طرح دو سال بعد ملا عمر کی موجودگی کا انکشاف ہو رہا ہے جس طرح دس سال تک اسامہ بن لادن کی موجودگی کے بعد اس کا پتہ چلا تھا۔ کیا پاکستان دھوکہ تو نہیں دے رہا؟ امریکی ترجمان نے اس فریب میں آنے کی بجائے واضح کیا کہ پاکستانی حکومت کراچی ہسپتال میں ملا عمر کے زیر علاج رہنے کی تردید کر رہی ہے اور ہم اس پر مزید تبصرہ نہیں کرسکتے۔ امریکی ترجمان سے پوچھا گیا کہ حال ہی میں فارن پالیسی میگزین میں چھپنے والی امریکی کمیشن کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان کے بانی نے 11 اگست کو اقلیتوں کا دن قرار دیا تھا لیکن پاکستان میں اقلیتوں کے حقوق پامال ہو رہے ہیں، اس سلسلے میں امریکہ کیا کر رہا ہے؟ ترجمان نے بتایا کہ امریکہ دنیا بھر میں اقلیتوں کے حقوق کے تحفظ کیلئے کام کر رہا ہے لیکن پاکستان کے حوالے سے کوئی الگ اقدام نہیں کیا جا رہا۔

مزید : صفحہ اول