سندھ اور کراچی کارڈ کی بجائے ملکی مفادات کو دیکھنے کی ضرورت ہے ، سراج الحق

سندھ اور کراچی کارڈ کی بجائے ملکی مفادات کو دیکھنے کی ضرورت ہے ، سراج الحق

 لاہور( نمائندہ خصوصی) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے ایم کیو ایم کا سابقہ ریکارڈ بتاتا ہے کہ وہ استعفے واپس لے گی ۔سندھ کارڈ اور کراچی کارڈ کی بجائے ملکی مفادات کو دیکھنے کی ضرورت ہے ۔سیاست میں بارودی مزاج نہیں چلتا ،سیاسی بحرانوں سے سیاستدانوں کو نہیں عام آدمی کو نقصان ہوتا ہے ۔ مرکزی اورصوبائی حکومتوں کو اپنی مدت مکمل کرنی چاہئے ۔ ملک میں سیاست اور جمہوریت میں پختگی آ رہی ہے ۔سیاسی جماعتیں میرٹ اور قانون کی بالا دستی اور کرپشن کے خاتمہ پر یکسو ہوجائیں ۔حکمران اصلاح کا آغاز اپنی ذات سے کریں تو ملک ترقی کرسکتا ہے ۔موثر میڈیا کی وجہ سے جھوٹ زیادہ دیر نہیں چلتا ۔سچ بولنا مشکل اور کڑوا ہے مگر سچائی ہی میں نجات ہے ۔سیاہ چہروں کو بے نقاب کرنا میڈیا کا فرض ہے ۔بعض لوگ مقدس گائے بننے کی کوشش کرتے ہیں مگر اللہ کی نظر میں سب برابر ہیں ۔عوام بیدار ہوجائیں الیکشن ڈے کو یوم الحساب بنایا جاسکتا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے مرکزی تربیت گاہ کے اختتامی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ جاگیر داروں ، وڈیروں اور سرمایہ داروں نے سیاست کو پیسے کا کھیل اور تجارت بنا دیا ہے ،یہ لوگ الیکشن میں کروڑوں خرچ کرتے ہیں اور کامیاب ہونے کے بعد اربوں روپے کی کرپشن کرتے ہیں ،انہوں نے کہا کہ یہ انتخابات کو سرمایہ کاری سمجھتے ہیں ۔اگر عام آدمی کو اپنے ووٹ کی قوت کا اندازہ ہوجائے تو کبھی ان ضمیر فروشوں کو اپنی گردنوں پر سوار نہ کریں ۔انہوں نے کہا کہ ووٹر آزاد نہیں ۔ابھی تک پنجاب میں جاگیردارانہ ،سندھ میں وڈیرہ شاہی ،بلوچستان میں سرداری نظام اور خیبر پختونخواہ میں خوانین عوام کی گردنوں پر سوار ہیں اور وہ کسی کو اپنی آزاد مرضی سے ووٹ استعمال نہیں کرنے دیتے ۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی اس فرعونیت کے خاتمے کیلئے اسٹیٹس کو ،کوجڑ وں سے اکھاڑ پھینکنے کی جدوجہد کررہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ عوام کو اس استحصالی شکنجے سے نکالنے کیلئے ضروری ہے کہ عام آدمی خوف سے باہر آئے اور ان وڈیروں ،جاگیرداروں اور سرمایہ داروں کے خلاف جدوجہد میں ہمارا ساتھ دے ۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی 2018کے انتخابات میں چاروں صوبوں میں بڑی عوامی قوت بن کر سامنے آئے گی۔سراج الحق نے کہا کہ 68سال سے ملکی اقتدار پر قابض اشرافیہ نے آئین اور دستور سے مسلسل بے وفائی اور بغاوت کا رویہ اپنا رکھا ہے ۔پاکستان کا کوئی علاقہ ایسا نہیں جو ان کے ظلم سے محفوظ ہو ۔عوام کو اس لئے محروم اور مجبور رکھا گیا ہے کہ وہ پیٹ بھر کر روٹی کھائیں گے اور ان کے بچے پڑھ لکھ گئے تو ان وڈیروں کی نوکری کون کرے گا۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی ایک منظم جماعت ہے جو عوام کی خدمت اور ملک و قوم کی خوشحالی کا ایک مکمل وژن اور منصوبہ رکھتی ہے ۔پاکستان کو اسلامی وفلاحی مملکت بنانے کیلئے ہمارے پاس دیانتدار اور خدمت گار لوگوں کی ٹیم ہے ۔

مزید : صفحہ اول